• بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن

ڈاکو راج جاری، پولیس ناکام، شادمان میں حافظ قرآن شہید

کراچی(این این آئی) شہر بھر میں پولیس ناکوں کے باوجود ڈاکو راج میں ایک حافظ قرآن نوجوان مزاحمت کرنے پر زندگی کی بازی ہار گیا،مقتول اسامہ والدین کا اکلوتا بیٹا تھا جو دوستوں کے ہمراہ نئی موٹرسائیکل خریدنے نکلا تھا جبکہ ایک اور واردات کے دوران 3 بچوں کا باپ بھی ڈکیتوں کی گولی کا نشانہ بن کر جاں بحق ہوگیا۔شادمان ٹائون کے علاقے زین العابدین امام بارگاہ کے قریب موٹر سائیکل سوار ڈاکوئوں نے لوٹ مار کے دوران مزاحمت پر نوجوان کو فائرنگ کر کے قتل کر دیا جسکی لاش عباسی شہید اسپتال منتقل کی گئی۔پولیس کے مطابق مقتول کی شناخت 22 سالہ اسامہ کے نام سے کی گئی جسے سینے پر گولی لگی تھی۔ مقتول شادمان ٹائون کا رہائشی بتایا جاتا ہے۔ اطلاع ملتے ہی نوجوان کے دوستوں اور اہل خانہ کی بڑی تعداد اسپتال پہنچی، جہاںرقت آمیز مناظر دیکھنے میں آئے۔ڈاکوئوں کی فائرنگ سے جاں بحق ہونے والے 22 سالہ اسامہ کے والد ایوب نے بتایا کہ ان کا بیٹا حافظ قرآن تھا جس نے حال ہی میں میٹرک کا امتحان پاس کیا تھا ۔ مقتول کی 2 روز قبل نئی موٹر سائیکل چھن گئی تھی اور وہ دوسری موٹر سائیکل خریدنے کیلئے اپنے دوستوں کے ساتھ شادمان ٹائون میں کسی کے پاس آیا تھا کہ اس دوران ڈاکو آگئے ۔یہ افسوسناک واقعہ پیش آیا۔والد نے کہاکہ اسامہ میرے ساتھ کام کرتا تھا، میراایک ہی بیٹاتھا جوڈاکوئوں نے چھین لیا۔ دوسری جانب نیوکراچی ایوب گوٹھ سندھ کوآپریٹیو ہائوسنگ سوسائٹی کے قریب ڈاکوئوں کی فائرنگ سے 3 بچوں کا باپ جاں بحق ہوگیا مقتول کی شناخت 35 سالہ زبیر ولد سمیع اللہ کے نام سے کی گئی جو 4 سال سے سندھ سکیورٹی میں بطور گارڈ ملازم تھا۔ مقتول کا آبائی تعلق میر پور خاص سے تھا۔ مقتول زبیر ڈیوٹی ختم کر کے اپنے بیوی بچوں کو گھر لے جانے کے لیے جا رہا تھا کہ ڈاکوئوں نے لوٹ مار کی واردات کے دوران فائرنگ کر کے قتل کردیا۔واضح رہے کہ گزشتہ ماہ ستمبر میں ڈاکووں نے لوٹ مار کے دوران مزاحمت پر 16 افراد کو گولیاں مار کر زندگی سے محروم کر دیا جبکہ 50 سے زائد شہریوں کو فائرنگ کر کے زخمی کر دیا ۔
اہم خبریں سے مزید