آپ آف لائن ہیں
جنگ ای پیپر
بدھ13؍ربیع الثانی 1441ھ 11؍دسمبر 2019ء
Namaz Timing
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیئرمین و ایگزیکٹوایڈیٹر: میر جاوید رحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن
تازہ ترین
آج کا اخبار
کالمز

اپوزیشن کا فارن فنڈنگ کیس کا فیصلہ جلد سنانے کا مطالبہ

اپوزیشن کا فارن فنڈنگ کیس کا فیصلہ جلد سنانے کا مطالبہ


اپوزیشن نے پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) فارن فنڈنگ کیس کا فیصلہ جلد از جلد سنانے کا مطالبہ کردیا۔

سیکریٹری الیکشن کمیشن سے اپوزیشن جماعتوں کی رہبر کمیٹی کے ارکان نے ملاقات کی۔

ملاقات کے بعد میڈیا سے گفتگو میں سربراہ رہبر کمیٹی اکرم خان درانی نے کہا کہ فیصلہ آئے گا تو پوری تحریک انصاف کا صفایا ہو جائےگا۔

انہوں نے استفسار کیا کہ وزیراعظم عمران خان احتساب سے کیوں بھاگ رہے ہیں؟ پانچ سال ہوگئے تحریک انصاف کےخلاف تحقیقات مکمل نہیں ہوئی۔

اکرم درانی نے مزید کہا کہ الیکشن کمیشن میں روزانہ کی بنیاد پر تحقیقات کی جائے، اس کیس میں تاخیر ملک قوم کے لیے نقصان دہ ہے۔

رہبر کمیٹی کے سربراہ نے یہ بھی کہا کہ حکومت اپوزیشن جماعتوں کے درمیان غلط فہمیاں پھیلانے کی کوشش نہ کرے تو اچھا ہے۔

مسلم لیگ (ن) کے جنرل سیکریٹری احسن اقبال نے عمران خان پر تاخیری حربے استعمال کرنے کا الزام لگایا اور کہا کہ اگلے مہینے چیف الیکشن کمشنر ریٹائر ہو رہے ہیں، پی ٹی آئی کوشش کر رہی ہےکہ الیکشن کمیشن کی تشکیل ختم ہوجائے تا کہ مقدمے کی کارروائی غیر موثر ہوجائے۔

انہوں نے مزید کہا کہ پی ٹی آئی بے قصور ہے تو کارروائی خفیہ رکھنے کی درخواست کیوں کر رہی ہے؟ دوسروں کو چور کہنے والوں نے عوام کے چندے کے ساتھ کھلواڑ کیا ہے۔

احسن اقبال نے یہ بھی کہا کہ عمران نیازی اور ان کے ساتھی اس اسکینڈل میں ملوث ہیں، پی ٹی آئی وہ جماعت ہے جس نے درجنوں بے نامی اکاؤنٹس رکھے۔

ان کا کہنا تھا کہ امریکا، یورپ، بھارت، مشرق وسطیٰ سے پی ٹی آئی رہنماؤں کے ذاتی اکاؤنٹس میں پیسے آتے تھے، فنڈنگ کیس کرپشن کی تاریخ کا میگا اسکینڈل ہے۔

پیپلز پارٹی کے نیئر بخاری نے کہا کہ قوم کا مطالبہ ہے کہ تحریک انصاف تلاشی دے، پانچ سال سے مقدمہ زیر التوا ہے، پی ٹی آئی ہر موقع پر نئی درخواست دیتی ہے۔

اے این پی کے میاں افتخار نے کہا کہ اس کیس کا فیصلہ آجائے تو نہ عمران خان اور نہ ہی ان کی کابینہ رہے گی۔

قومی خبریں سے مزید