آپ آف لائن ہیں
جنگ ای پیپر
اتوار17؍ ربیع الثانی 1441ھ 15؍ دسمبر 2019ء
Namaz Timing
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیئرمین و ایگزیکٹوایڈیٹر: میر جاوید رحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن
تازہ ترین
آج کا اخبار
کالمز

دعا منگی اغوا کیس، پولیس بیانات ریکارڈ کرنے سے آگے نہ بڑھ سکی

دعا منگی اغوا کیس، پولیس بیانات ریکارڈ کرنے سے آگے نہ بڑھ سکی 


کراچی (اسٹاف رپورٹر) کراچی کے علاقے ڈیفنس میں فائرنگ کے بعد کار سوار ملزمان کے ہاتھوں اغوا ء ہونے والی لڑکی اور زخمی حارث سومرو کے ملزمان کا کچھ پتہ نہ چل سکا۔ دوسری طرف منگی کی بازیابی کے لیے منگل کو کلفٹن کے علاقے میں مظاہرہ ہوا جس میں مختلف تنظیموں اور اُن کے نمائندوں نے شرکت کی۔ 

مظاہرین نے حکومت کو 48؍گھنٹے کا الٹی میٹم دیتے ہوئے کہا ہے کہ اگر بازیاب نہ کرایا گیا تو ریڈزون میں دھرنا دیا جائے گا،مظاہرے کے سبب علاقے میں ٹریفک جام ہو گیا۔ مظاہرین نے دعا منگی کی فوری بازیابی کا مطالبہ کیا۔

پولیس بیانات ریکارڈ کرنے اور سی سی ٹی وی فوٹیج لینے کے علاوہ کچھ نہ کر سکی۔تفتیشی حکام کے مطابق واقعہ کے حوالے سے آٹھ افراد کا اب تک بیان ریکارڈ کیا جاچکا ہے، بیان دینے والوں میں حارث کے 3 دوست اور دعا کی بہن بھی شامل ہے.

کیس میں رکشہ ڈرائیو،سکیورٹی گارڈ اور ہوٹل کے دو ملازمین کا بھی بیان لیا گیا ہے،تفتیشی حکام کے مطابق دوستوں اور دعا کی بہن کے مطابق حارث اور دعا حمزہ کی سالگرہ میں آئے تھے،حمزہ کے مطابق پارٹی ختم ہونے کے بعد سب چلے گئے دعا اور حارث وہیں موجود تھے.

واقعہ کے حوالے سے دوستوں نے فون کرکے بتایا، حمزہ کے مطابق حارث اور دعا نے کبھی کسی سے جھگڑے کا ذکر نہیں کیا،واقعہ میں زخمی حارث کا بیان تاحال نہیں لیا جاسکا،ڈاکٹرز حارث کے بیان کی اجازت نہیں دے رہے.

تفتیشی حکام نے بتایا کہ حارث ہوش میں آتا ہے کچھ دیر بعد بے ہوش ہوجاتا ہے،امکان ہے جلدحارث کا بیان ریکارڈ کیا جائیگا، تفتیشی حکام کے مطابق حارث کے دوستوں کو بیان لینے کے لیے بلایا تھا حراست میں نہیں لیا۔

پولیس کے مطابق واقعہ میں استعمال ہونے والے گاڑی شاہراہ فیصل کے علاقے سے مل گئی ہے،گاڑی کا فرانزک کروایا جا رہا ہے۔ ایس ایس پی ایسٹ تنویر عالم اوڈھو اور دعا کیس کی خصوصی تفتیشی ٹیم نے جائے وقوعہ پر پہنچ کر جائزہ لیا۔ پولیس کے مطابق ملنے والی گاڑی کا فارنزک کروایا جائیگا.

انہوں نے بتایا کہ گاڑی لاوارث حالت میں ملی ہے، ابتدائی طور پر ایسا لگ رہا ہے جیسے ملزمان گاڑی چھوڑ کر فرار ہو گئے ہوں۔دعا منگی کو اغوا ہوئے 4 روز ہو گئے ہیں،اب تک انہیں بازیاب نہیں کرایاجاسکاہے ۔

پولیس ذرائع کے مطابق دعا نثار منگی کو جس گاڑی میں ملزمان اپنے ساتھ لیکر گئے وہ کار طارق روڈ سے چھینی گئی تھی۔ ذرائع کے مطابق پولیس نے اب تک 22 افراد کا بیان ریکارڈ کیا جا چکا ہے، دعا کے والدکے مطابق 10روز پہلے دعا کا مظفر نامی لڑکے سے جھگڑا ہوا تھا جس کے بعد دعا کو اغوا کیا گیا۔

اہم خبریں سے مزید