آپ آف لائن ہیں
پیر2شوال المکرم1441ھ25؍مئی 2020ء
Namaz Timing
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیئرمین و ایگزیکٹوایڈیٹر: میر جاوید رحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن
تازہ ترین
آج کا اخبار
کالمز

کورونا وائرس سے آئی فون بھی متاثر


کورونا وائرس نے جہاں انسانوں کی زندگیوں کو خطرے میں ڈال دیا ہے وہیں اس نے دنیا کی معروف موبائل فون کمپنی ایپل کو بھی اپنی لپیٹ میں لے لیا ہے۔

غیر ملکی ٹیبلائیڈ کی رپورٹ کے مطابق یہ وائرس ایپل کمپنی کی جان تو نہیں لے سکتا لیکن اس کے منافع میں کمی کرکے اسے پریشانی سے دوچار کر سکتا ہے۔

ماہرین کا ماننا ہے کہ کورونا وائرس کے ایشیا میں پھیلنے کی وجہ سے ایپل کی پروڈکشن متاثر ہوسکتی ہے جس کے باعث 2020 کے پہلے سہ ماہی میں اس کی سیلز 10 فیصد کم ہوسکتی ہیں۔

واضح رہے کہ چین میں کورونا وائرس کے پھیلنے کی وجہ سے آئی فون کے پارٹس بنانے والی فیکٹریاں بند کر دی گئی ہیں جبکہ اس کی وجہ سے ان پارٹس کے لیے ہونے والا کاروبار بھی بند ہے۔

ایپل کی سیلز میں کمی کا تجزیہ ٹیکنالوجی امور کے ماہر تجزیہ نگار منگ چی کو کی جانب سے سامنے آیا ہے۔

ان کی یہ پیشگوئی اس بات سے بھی ثابت ہوسکتی ہے کہ ایپل کے لیے زیادہ تر اسمارٹ فونز پارٹس تیار کرنے والی کمپنی فوکس کون نے چین میں اپنی تمام پروڈکشن بن کردی ہے۔

چین میں تمام فیکٹریوں سے کہا گیا ہے کہ وہ 10 فروری تک اپنے یونٹس بند رکھیں، تاہم اگر اس بندش میں یہ اضافہ ہوتا ہے تو اس کی وجہ سے شپمنٹ اثر انداز ہوسکتی ہے۔

ریٹیل ماہرین کا کہنا ہے کہ اگر فیکٹری بندش کا دورانیہ فروری 10 سے آگے جاتا ہے تو اس کی وجہ سے برآمدات کی اشیا کی قلت پیدا ہوسکتی ہے۔

واضح رہے کہ گزشتہ ہفتے ایپل کے سی ای او ٹم کوک نے بھی اعتراف کیا تھا کہ کورونا وائرس کی وجہ سے کمپنی کی سپلائی چین متاثر ہوئی تھی۔

انہوں نے مزید کہا تھا کہ کمپنی سپلائی کو بہتر بنانے کے لیے اقدامات کر رہی ہے۔

واضح رہے کہ ایپل کی طرح دیگر کمپنیوں کے اسمارٹ فونز کے لیے پارٹس چین میں تیار کیے جاتے ہیں۔

بین الاقوامی خبریں سے مزید
تجارتی خبریں سے مزید
خاص رپورٹ سے مزید