آپ آف لائن ہیں
جمعہ13؍شوال المکرم 1441ھ 5؍جون 2020ء
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیئرمین و ایگزیکٹوایڈیٹر: میر جاوید رحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن
Jang Group

رنگارنگ افتتاحی تقریب کے ساتھ پاکستان سپر لیگ سیزن 5 کا آغاز

رنگارنگ افتتاحی تقریب کے ساتھ پاکستان سپر لیگ سیزن 5 کا آغاز


پاکستان سپر لیگ (پی ایس ایل) کا آغاز رنگانگ افتتاحی تقریب سے ہوگیا ہے جہاں فنکاروں نے اپنے فن کا جادو چلایا۔

کراچی کے نیشنل اسٹیڈیم میں ہونے والی اس تقریب وزیراعلیٰ سندھ مراد علی شاہ اور چیئرمین پاکستان کرکٹ بورڈ (پی سی بی) احسان مانی نے بھی خطاب کیا۔

تقریب کا باقاعدہ آغاز قومی ترانے کے ساتھ ہوا جبکہ اس سے قبل ایونٹ کے لیے سیکیورٹی انتظامات کرنے پر ملک کے سیکیورٹی اداروں اور قانون نافذ کرنے والے اداروں کو خراج تحسین پیش کیا گیا۔



پی ایس ایل کی تمام فرنچائزز کے مالکان اپنی ٹیم کے کپتانوں کے ہمراہ میدان میں آئے، لیکن لاہور میں مصروف رہنے کی وجہ سے ملتان سلطانز کے کپتان افتتاحی تقریب میں شرکت نہ کرسکے اور صرف ٹیم مالک ہی میدان میں آئے۔

تقریب کے دوران صنم ماروی اینڈ گروپ، سجاد علی، آئمہ بیگ ، ابرار الحق اور راحت فتح علی خان نے اپنی آواز کا جادو جگایا۔

آخر میںپی ایس ایل فائیو کے آفیشل نغمے پر جلوہ گر ہونے والے فنکاروں نے انٹری دی اور میلا لوٹ لیا۔

پی ایس ایل افتتاحی تقریب کیلئے کراچی والوں کو مبارک ہو

قبل ازیں تقریب سے وزیراعلیٰ سندھ مراد علی شاہ نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ہم نے پچھلے سال کہا تھا کہ ہم کراچی میں پی ایس ایل کروائیں گے، آج یہاں افتتاحی تقریب کر رہے ہیں، جس کے لیے کراچی والوں کو مبارک ہو۔

ان کا کہنا تھا کہ میں نے 2017 میں پی سی بی سے یہ درخواست کی تھی کہ ایک میچ کراچی میں کروائیں، تاہم آج اس کا سہرا کراچی والوں کو جاتا ہے، 2018 کے پی ایس ایل کا فائنل اور اب پورا ایونٹ پاکستان میں ہورہا ہے۔

وزیراعلیٰ سندھ نے کہا کہ میں نے پی سی بی کے سابق چیئرمین نجم سیٹھی سے یہ درخواست کی تھی کہ شہر میں میچز کروائے جائیں۔

انہوں نے بتایا کہ جب مشرقی سرحد پر تناؤ بڑھا تھا تو ہم نے تمام میچز کراچی میں منعقد کروائے تھے۔

وزیراعلیٰ سندھ نے عزم کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ ہم پی ایس ایل کے اس پانچویں ایڈیشن کو کامیاب بنائیں گے۔

آخر میں وزیر اعلیٰ سندھ نے پاکستان زندہ باد کا نعرہ بھی بلند کروایا۔

جو وعدہ کیا وہ پورا کیا

چیئرمین پی سی بی نے خطاب کرتے ہوئے تمام غیر ملکی کھلاڑیوں اسٹاف اور دیگر ٹیکنیشن کو پاکستان آمد پر خوش آمدید کہا۔

ان کا کہنا تھا کہ ہم نے پچھلے سال جو وعدہ کیا تھا کہ اگلے سال پی ایس ایل پاکستان میں ہوگا وہ وعدہ پورا کردیا۔

احسان مانی کا کہنا تھا کہ اگلے سال پی ایس ایل کے میچز پشاور کے اسٹیڈیم میں بھی کروائے جائیں گے۔

ان کا کہنا تھا کہ پی ایس ایل کی کامیابی کی مبارکباد کے حقدار کرکٹ کے شائقین ہیں۔

چیئرمین پی سی بی کا کہنا تھا کہ اگر حکومتِ سندھ اور حکومتِ پنجاب کی سپورٹ نہیں ہوتی تو پاکستان میں پی ایس ایل کا انعقاد مشکل ہوجاتا۔

انہوں نے سیکیورٹی کے بہترین انتظامات کرنے پر پاکستان کے سیکیورٹی اداروں کا بھی شکریہ ادا کیا۔

احسان مانی نے تمام ٹیموں کے لیے نیک خواہشات کا اظہار کیا اور کہا کہ جو ٹیم بہتر کھیل پیش کرے گی وہی یہ ٹورنامنٹ جیتے گی۔

کھیلوں کی خبریں سے مزید