آپ آف لائن ہیں
جمعرات12؍شوال المکرم 1441ھ4؍جون2020ء
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیئرمین و ایگزیکٹوایڈیٹر: میر جاوید رحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن
Jang Group

کابینہ کی اقتصادی رابطہ کمیٹی نے بدھ کے روز اپنے اجلاس میں ملک بھر میں مزید برانچیں کھولنے کی ہدایت کرتے ہوئے یوٹیلیٹی اسٹورز کارپوریشن کیلئے وزیراعظم کے اعلان کردہ ریلیف پیکیج کے تحت 50ارب روپے کی جو منظوری دی ہے اس میں سے ڈھائی ارب رمضان المبارک کیلئے منظور کیے گئے ہیں۔ اس سلسلہ میں کارپوریشن کے چیئرمین کو ہدایت کی گئی ہے کہ کورونا اور رمضان کے پیش نظر عوام الناس کو کم قیمت پر اشیائے ضروریہ کی فراہمی یقینی بنائی جائے۔ یہ غریب، پسماندہ، تنخواہ و اجرت دار طبقے کیلئے موجودہ حالات میں حکومت کا معیشت کی دگرگوں حالت میں خوش آئند اقدام ہے جس سے ملک کے 5939یوٹیلٹی اسٹوروں پر رمضان المبارک کے لحاظ سے جملہ اشیائے خور و نوش میسر آسکیں گی۔ 17اپریل سے عیدالفطر تک ان اسٹورز پر آٹے کا 20کلو کا تھیلا 800روپے جملہ قیمتیں چینی فی کلو 68روپے، گھی 170روپے، چاول 139سے 149روپے کی موجودہ سطح پر برقرار رہیں گی۔ یوٹیلٹی اسٹورز پر متذکرہ اشیا کی عام آدمی کو فراہمی تبھی یقینی بنائی جا سکتی ہے کہ اس کا کوئی میکنزم ہو کیونکہ بہت سے مقامات پر موقع پرست عناصر، ذخیرہ اندوز دکاندار اہلکاروں کے ساتھ مل کر وہاں سے اشیا سستے داموں لیکر کھلی مارکیٹ کے نرخوں پر مہنگے داموں فروخت کرنے کے مرتکب ہوتے ہیں جس سے حکومت کا اربوں روپے کا پیکیج بےمقصد ہو کر رہ جاتا ہے جبکہ موجودہ رمضان کورونا سے پیدا شدہ مشکل ترین حالات میں آ رہا ہے جس میں عوام کی قوتِ خرید بالکل جواب دے چکی ہے۔ لاکھوں افراد پہلے ہی بیروزگاری کے سبب ان حالات کا مقابلہ کرنے کی سکت نہیں رکھتے جس سے نمٹنے کیلئے ضروری ہوگا کہ حکومت ایسا طریقہ کار وضع کرے کہ رمضان پیکیج صرف حقداروں تک پہنچ سکے، اس کیساتھ ساتھ جملہ میگا اسٹورز کو بھی اس ماہِ مقدس میں ازخود قیمتوں میں رعایت دینی چاہئے۔

اداریہ پر ایس ایم ایس اور واٹس ایپ رائے دیں00923004647998

تازہ ترین