آپ آف لائن ہیں
اتوار18؍ذی الحج 1441ھ 9؍اگست 2020ء
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیئرمین و ایگزیکٹوایڈیٹر: میر جاوید رحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن
Jang Group

کراچی لوڈشیڈنگ کا مسئلہ مارچ 2022ء میں حل ہوجائے گا، اسد عمر


کراچی (ٹی وی رپورٹ)فاقی وزیر منصوبہ بندی اسد عمرنے کہا ہے کہ عیدالاضحیٰ پر بڑے شہروں میں منڈیاں نہیں لگائی جائیں گی، شہر سے باہر منڈیاں لگائی جائیں گی جہاں ایس او پیز اختیار کیے جائیں گے،لوگوں سے اپیل ہے کہ اس سال اجتماعی قربانی کریں تو بہتر ہوگا۔

کورونا پر ٹی وی پر سیاست ہوتی ہے لیکن عملی طور پر سب مل کر کام کررہے ہیں،کراچی میں لوڈشیڈنگ کا مسئلہ مکمل طور پر مارچ 2022ء میں حل ہوجائے گا،اسکول سے یونیورسٹی تک تمام تعلیمی ادارے 15ستمبر سے کھولنے کا اصولی فیصلہ کیا گیا ہے۔ 

وہ جیو کے پروگرام ”کیپٹل ٹاک“ میں میزبان حامد میر سے گفتگو کررہے تھے۔ پروگرام میں وفاقی وزیر نیشنل سیکورٹی فخر امام سے بھی گفتگو کی گئی۔

فخر امام نے کہا کہ ٹڈی دل کے مقابلہ کیلئے نیشنل لوکسٹ کنٹرول سینٹر بنایا گیا ہے، پاک فوج کا ایک ادارہ وفاق ، صوبوں، ضلعوں کی سطح پر اسے دیکھ رہا ہے، وفاقی حکومت ،ہماری وزارت، این ڈی ایم اے، صوبائی حکومتیں اور ڈپٹی کمشنرزاس پر کام کررہی ہیں۔

ٹڈی دل سے آئندہ مہینوں میں خریف کی تمام فصلوں کو خطرہ ہے، ٹڈی دل سے مقابلہ کیلئے انڈیا اور افغانستان کے مقابلہ میں پاکستان کی تیاری بہت بہتر ہے،افریقا سے ٹڈی دل آرہا ہے مگر پیشگوئی نہیں کرسکتے کہ کتنی بڑی تعداد ہوگی ،پنجاب حکومت قیمتوں میں استحکام کیلئے اکتوبرکے بجائے جولائی میں سبسڈی کے ساتھ گندم ریلیزکرے گی۔ 

وفاقی وزیر منصوبہ بندی اسد عمرنےکہا کہ عید پر لوگوں کی بڑی تعداد نے بے احتیاطی کی جس کی وجہ سے کورونا کے پھیلاؤ میں تیزی نظر آئی، رمضان میں مساجد میں احتیاطی تدابیر پر عمل کرنے سے فائدہ دیکھنے میں آیا تھا، لوگ احتیاطی تدابیر پر عمل کریں گے تو زندگی کا پہیہ چلتا رہے گا، اگر بد احتیاطی کریں گے تو اس کی قیمت بھی ادا کرنا پڑے گی۔ 

اسد عمر کا کہنا تھا کہ عیدالاضحیٰ پر بڑے شہروں میں منڈیاں نہیں لگائی جائیں گی، شہر سے باہر جہاں منڈیاں لگائی جائیں گی وہاں ایس او پیز اختیار کیے جائیں گے،مویشی منڈیوں میں جاتے ہوئے احتیاط کی جائے اور زیادہ رش نہ لگایا جائے۔

 لوگوں سے اپیل ہے کہ اس سال اجتماعی قربانی کریں تو بہتر ہوگا، دینی و فلاحی اداروں کو اجتماعی قربانی کیلئے نامزد کرنا سب سے بہتر بات ہے، عید کی نماز اور گلے ملنے میں بھی احتیاط کی جائے۔

اہم خبریں سے مزید