آپ آف لائن ہیں
ہفتہ24؍ذی الحج 1441ھ15؍اگست 2020ء
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیئرمین و ایگزیکٹوایڈیٹر: میر جاوید رحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن
Jang Group

سینیٹ: این ایف سی ایوارڈ میں صوبوں کا حصہ کم کرنے کی پہلی کوشش ناکام


قومی مالیاتی کمیشن (این ایف سی) ایوارڈ میں صوبوں کا حصہ کم کرنے کی پہلی کوشش سینیٹ میں ناکامی سے دوچار ہوگئی۔

حکومتی اتحادی جماعت ایم کیو ایم کے بیرسٹر محمد علی سیف نے این ایف سی ایوارڈ میں صوبوں کا حصہ کم کرنے کے ترمیمی بل کو پیش کرنے کی تحریک پیش کی تو یہ تحریک کثرت رائے سے مسترد ہوگئی۔

سینیٹ اجلاس کے دوران مولانا عطا الرحمان اور بیرسٹر محمد علی سیف کے درمیان تلخ جملوں کا تبادلہ ہوا۔

مولانا عطا الرحمان نے کہا کہ انہیں فیڈ کیا گیا ہے کہ قوم کو لڑانا ہے جس پر  محمد علی سیف بولے  آپ کو حیا نہیں، ہمیں حیا ہے۔

اس پر پیپلز پارٹی کی سینیٹر شیری رحمان نے کہا کہ حکومتی بنچز سے عوام کے حقوق اور جمہوریت کے دل پر شب خون مارا جا رہا ہے۔

سینیٹر رضا ربانی نے کہا کہ اشرافیہ کو متنبہ کرنا چاہتا ہوں کہ فالٹ لائن دوبارہ کھل جائے گی۔

انھوں نے کہا کہ تھری اے کی نظر ثانی کو تیار ہیں، پھر ہم یہ بات کریں گے کہ ٹیکس کی وصولی کا اختیار صوبوں کو دے دیا جائے۔

ایم کیو ایم پاکستان کے سینیٹر بیرسٹر محمد علی سیف کا کہنا تھا کہ آپ کس بات سے ڈر رہے ہیں، اپنے ممبران کو قابو میں رکھو کہ کہیں وہ پھسل نہ جائیں۔

قومی خبریں سے مزید