آپ آف لائن ہیں
اتوار2؍صفر المظفّر 1442ھ 20؍ستمبر 2020ء
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیئرمین و ایگزیکٹوایڈیٹر: میر جاوید رحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن
Jang Group

ایٹاکے ذریعے سب انجینئرز کی بھرتیاں غیرقانونی قرار

پشاور(ارشد عزیز ملک ) پراونشل انسپکشن ٹیم (پی آئی ٹی) نے پبلک ہیلتھ انجینئرنگ ڈیپارٹمنٹ (پی ایچ ای) میں سب انجینئرز کی بھرتی کو غیر قانونی ، امتیازی سلوک ، بدنظمی ، مشکوک اور میرٹ کی سراسر خلاف ورزی قرار دیا ہے۔پی آئی ٹی نے خیبرپختونخوا میں ایجوکیشنل ٹیسٹنگ اینڈایولویشن ایجنسی (ایٹا) کی کارکردگی اور امتحانات کے طریقہ کار پر بھی سنگین سوالات اٹھائے ہیں۔پی آئی ٹی نے تحقیقات مکمل ہونے تک چیف انجینئر ، دو سپرنٹنڈنٹ انجینئرز ، سیکشن آفیسر اور پی ایچ ای کے دو ایڈمن افسروں سمیت چھ اہلکاروں کو معطل کرنےاور بھرتیاں منسوخ کرنے کی سفارش کی ہے۔معائنہ ٹیم نے اپنی رپورٹ وزیر اعلیٰ کے پی کوپیش کردی ہے جس کی کاپی جنگ کے پاس موجود ہے ۔رپورٹ میں امیدواروں کو میرٹ ، شفافیت ، منصفانہ انصاف اور مساوی مواقعوں کے ذریعے فراہم کرنے کے لئے پوسٹوں کی دوبارہ تشہیر کی درخواست کی گئی ہے۔انکوائری رپورٹ میں بھرتی کے عمل کو مشکوک ، غیر قانونی اور قواعد کےبر خلاف قراد دیا گیا ہے۔

اہم خبریں سے مزید