آپ آف لائن ہیں
جمعہ12؍ربیع الاوّل 1442ھ 30؍اکتوبر2020ء
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیئرمین و ایگزیکٹوایڈیٹر: میر جاوید رحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن
Jang Group

کوویڈ 19 کے پروٹوکولز کی خلاف ورزی، بلوچستان کے ہیڈ کوچ سیلف آئسولیشن میں رہیں گے

بلوچستان کے ہیڈ کوچ سیلف آئسولیشن میں رہیں گے 


کراچی(اسٹاف رپورٹر)پاکستان کرکٹ بورڈ کا کہنا ہے کہ قو ٹی ٹوئینٹی کرکٹ ٹورنامنٹ میں کوویڈ19 کے پروٹوکولز کی خلاف ورزی کرنے پر بلوچستان کے ہیڈ کوچ فیصل اقبال اور اسسٹنٹ کوچ وسیم حیدراب مزید 5 روز کنٹری کلب مریدکے میں سیلف آئسولیشن میں رہیں گے۔ اس دوران ان دونوں کوچز کے 2کوویڈ19 ٹیسٹ ہوں گے، جس کی رپورٹ منفی آنے پر انہیں بائیو سیکیور ببل میں داخلے کی اجازت دی جائے گی۔ کوویڈ19 پروٹوکولز کی خلاف ورزی کے بعد ان دونوں کوویڈ19 ٹیسٹ کے اخراجات فیصل اقبال اور وسیم حیدر کو خود برداشت کرنے ہوں گے۔فیصل اقبال کو حال ہی میں پی سی بی میں ملازمت ملی ہے لیکن انہوں نے احتیاط سے گریز کیا ہے۔ڈاکٹر ریاض احمد نے کہا کہ تمام ٹیموں کو کوویڈ19 کے پروٹوکولز پر بریفنگ کے باوجود فیصل اقبال اور وسیم حیدر کا خلاف ورزی کرنا افسوسناک ہےتاہم اس عمل سے بائیو سیکیور ببل میں رہنے والے تمام افراد کو ایک بار پھر واضح پیغام مل گیا ہے کہ پی سی بی کوویڈ19 کے پروٹوکولز پر زیرو ٹولیرنس پالیسی اپنائے ہوئے ہے۔انہوں نے مزید کہا کہ کھلاڑیوں اور سپورٹ اسٹاف سمیت تمام اسٹیک ہولڈرز کی صحت اور حفاظت ہماری اولین ترجیح ہے تاہم پی سی بی کو اندازہ ہے کہ ان غیرمعمولی حالات میں ہمیں مختلف چیلنجز کا سامنا کرنا پڑے گا ، جس سے نمٹنے کے لیے تمام اسٹیک ہولڈرز سے تعاون کی درخواست ہے۔ سنٹرل پنجاب کے وکٹ کیپر بیٹسمین کامران اکمل نے چند روز تاخیر سے بائیو سیکیور ببل جوائن کرنے کی درخواست کی تھی۔ کامران اکمل کا دوسرا کوویڈ19 ٹیسٹ 23 ستمبر کو ہوگا، جس کی رپورٹ منفی آنے پر انہیں ملتان میں بنائے گئے بائیو سیکیور ببل جوائن کرنے کی اجازت ہوگی۔ اس سے قبل دیگر 102 کھلاڑیوں کی طرح کامران اکمل کے پہلے ٹیسٹ کی رپورٹ بھی منفی آئی تھی۔ڈاکٹر ریاض احمد، سربراہ پی سی بی کوویڈ19 میڈیکل ٹیم :پی سی بی کوویڈ19 میڈیکل ٹیم کے سربراہ ڈاکٹر ریاض احمد کا کہنا ہے کہ پاکستان کرکٹ بورڈ نے ڈومیسٹک سیزن برائے 21-2020 کے لیے اعلان کردہ کوویڈ19 پروٹوکولز پر سختی سے عملدرآمد کا عزم کررکھا ہے اور اس کی خلاف وزری کسی صورت برداشت نہیں کی جائے گی۔

اسپورٹس سے مزید