آپ آف لائن ہیں
بدھ10؍ربیع الاوّل 1442ھ28؍اکتوبر 2020ء
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیئرمین و ایگزیکٹوایڈیٹر: میر جاوید رحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن
Jang Group

شہباز شریف نے ممکنہ گرفتاری کو سیاسی رنگ دینے کی ناکام کوشش کی، فیاض چوہان


وزیر اطلاعات پنجاب فیاض الحسن چوہان نےکہا ہے کہ قائد حزب اختلاف اور ن لیگ کے صدر شہباز شریف اپنی ممکنہ گرفتاری کو سیاسی رنگ دینے کی ناکام کوشش کرر ہے ہیں۔

شہباز شریف کی پریس کانفرنس پر درعمل دیتے ہوئے فیاض الحسن چوہان نے کہا کہ گرفتاری سے پہلے کی اپوزیشن لیڈر کی پریس کانفرنس ایک بجھتے چراغ کی آخری ٹمٹماہٹ کے مترادف ہے۔

انہوں نے کہا کہ شہباز شریف کو جعلی اکاؤنٹس، منی لانڈرنگ، جعلی ٹی ٹی اور کرپشن کیسز میں اپنی گرفتاری نظر آ رہی ہے۔

وزیر اطلاعات پنجاب نے مزید کہا کہ شہباز شریف صاحب! آپ کی گرفتاری وزیر اعظم عمران خان کی ذاتی خواہش یا سیاسی انتقام نہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ آپ کی گرفتاری آپ کی لازوال، تابناک اور بے مثال کرپشن کے باعث عدالتوں اور احتسابی اداروں کی ضرورت ہے۔


فیاض الحسن چوہان نے یہ بھی کہا کہ شہباز شریف کا ایک دھیلے کی کرپشن نہ کرنے کا دعویٰ عوام کی آنکھوں میں مرچیں جھونکنے کے مترادف ہے۔

انہوں نے کہا کہ شہباز شریف صاحب! آپ نے کھربوں ڈالرز، یوروز، دینار، درہم اور روپے کی کرپشن کی ہے۔

وزیر اطلاعات پنجاب کا کہنا تھا کہ شہباز شریف اپنے بھائی نواز شریف اور بھتیجی مریم نواز کی لگائی گئی آگ بجھانے کی سر توڑ کوشش کر رہے ہیں۔

انہوں نے کہاکہ آل پارٹیز کانفرنس (اے پی سی) میں نواز شریف کی ایک گھنٹے کی تقریر نے شہباز شریف کی 2 سالہ محنت زائل کر دی۔

فیاض الحسن چوہان نے مزید کہا کہ کوویڈ-19 کے آغاز میں بھی شہباز شریف نے ملکی معیشت کی تباہی کا واویلا مچایا تھا، اللّٰہ کے کرم اور وزیر اعظم عمران خان کی احسن پالیسیوں کی بدولت حکومت اس امتحان میں سرخرو ہوئی۔

ان کا کہنا تھا کہ آج ایک دفعہ پھر شہباز شریف معیشت کی تباہی کا واویلا مچا رہے ہیں، 100 ارب منافع دینے والا صوبہ شہباز شریف نے 10سال میں 1250 ارب کا مقروض کردیا، اپنے آقاؤں کو چینی پر تاریخ کی سب سے بڑی سبسڈی دینے والوں کی ڈھٹائی قابلِ دید ہے۔

وزیراطلاعات پنجاب نے یہ بھی کہا کہ لیگی رہنما رات کے اندھیرے میں آرمی چیف اور خفیہ ایجنسی کے سربراہان سے ملاقاتیں کرتے ہیں اور دن کی روشنی میں یہی منافق رہنما قومی سلامتی کی اداروں کو ہدف تنقید بناتے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ آج عالمی برادری پاکستان کی معاشی سرگرمیوں میں برابر کی شریک ہونے پر فخر محسوس کرتی ہے۔

قومی خبریں سے مزید