آپ آف لائن ہیں
ہفتہ19؍ربیع الثانی 1442ھ 5؍دسمبر 2020ء
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیئرمین و ایگزیکٹوایڈیٹر: میر جاوید رحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن
Jang Group

امریکا نے مزید 6 چینی میڈیا اداروں پر پابندیاں عائد کردیں

واشنگٹن(آئی این پی) امریکا نے مزید 6 چینی میڈیا آرگنائزیشنز پر قوانین کو سخت کرتے ہوئے کہا ہے کہ یہ پروپیگینڈا آئوٹ لیٹس ہیں جو ریاست کو جوابدہ ہیں،یہ ضروری ہے کہ چین امریکا میں مقیم اسٹاف کی تفصیلات اور ریئل ای اسٹیٹ ٹرانزیکشنز سے متعلق اسٹیٹ ڈیپارٹمنٹ کو رپورٹ دے۔ بین الاقوامی میڈیاکی رپورٹ میں بتایا گیا کہ یہ غیرملکی مشنز کے طور پر چینی آئوٹ لیٹس پر امریکی پابندیوں کا تیسرا دور تھا، جس میں ان کے لیے ضروری ہے کہ وہ اپنے امریکا میں مقیم اسٹاف کی تفصیلات اور ریئل ای اسٹیٹ ٹرانزیکشنز سے متعلق اسٹیٹ ڈیپارٹمنٹ کو رپورٹ دیں۔اس حوالے سے امریکی سیکریٹری اسٹیٹ مائیک پومپیو کا ایک نیوز کانفرنس میں کہنا تھا کہ ان اداروں کو اپنی رپورٹنگ کے دوران کوئی پابندی کا سامنا نہیں کرنا پڑے گا۔ادھر اسٹیٹ ڈیپارٹمنٹ کی ترجمان مورگن ارتاگس نے پیپلز ریپبلک آف چائنا اور چائنیز کمیونسٹ پارٹی کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ اگرچہ دنیا بھر میں میڈیا سچائی کے لیے کام کرتا ہے جبکہ پی آر سی میڈیا سی سی پی کے لیے امور انجام دیتا ہے۔انہوں نے کہا کہ امریکا امریکا عوامی سطح پر ان پابندیوں کے ذریعے حقیقت کو تسلیم کر رہی ہے۔واضح رہے کہ غیرملکی مشنز کے طور پر شامل کی گئی ان 6 نئی تنظیموں میں یی کائی گلوبل، جی فینگ ڈیلی، شن من

ایوننگ نیوز، سوشل سائنسز ان چائنا پریس، بیجنگ ریویو اور اکنامک ڈیلی شامل ہیں۔

یورپ سے سے مزید