آپ آف لائن ہیں
اتوار10؍جمادی الثانی 1442ھ 24؍جنوری2021ء
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیئرمین و ایگزیکٹوایڈیٹر: میر جاوید رحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن
Jang Group

مشروم صحت کیلئے کتنا فائدہ مند ہوتا ہے؟

مشروم کی کاشت دنیا کے بہت سے ممالک میں ہوتی ہے جبکہ پاکستان میں بھی مشروم کی کاشت ایک صنعت کا درجہ اختیار کرتی جارہی ہے، مشروم ایک مزیدار اور مفید غذا ہے جس میں غذائیت کے وہ تمام اجزاء پائے جاتے ہیں جو ہماری صحت کے لیے فائدہ مند ہوتے ہیں۔

مشروم اُن نایاب غذاؤں میں سے ایک ہے جو وٹامن ڈی کا ذریعہ ہیں۔ یہ ایک کم کیلوری والی سبزی ہے جسے آپ وزن میں کمی کی غذا کے حصے کے طور پر بھی کھا سکتے ہیں۔ اس کو سالن، سلاد، سوپ میں استعمال کیا جاسکتا ہے اور یہاں تک کہ ناشتے کے طور پر بھی کھایا جاسکتا ہے۔

ہر روز اس حیرت انگیز طور پر مزیدار غذا کو کھانے کی دوسری وجوہات جاننے کے لیے یہاں پڑھیں۔

مشروم کے حیر ت انگیز فوائد:

وٹامن بی اور ڈی سے بھرپور:

آپ مشروم سے وٹامن ڈی حاصل کرسکتے ہیں، یووی لائٹ کے سامنے آنے پر مشروم وٹامن ڈی بناتے ہیں۔ یہ مجموعہ دل کی صحت کی حفاظت میں مدد کرتی ہے۔ ریبوفلوین سرخ خون کے خلیوں کے لیے اچھا ہے۔ عمل انہضام کے نظام اور صحت مند جلد کو برقرار رکھنے کے لیے بھی وٹامن بی بہت مفید ہوتا ہے۔

وزن میں کمی:

مشروم میں کیلوری کی مقدار کم ہوتی ہے۔ ایک مشروم میں صرف 20 کیلوریز پائی جاتی ہیں، اس کو کھانے سے آپ کا پیٹ زیادہ وقت تک بھرا ہوا رہ سکتا ہے اور آپ کی بڑھتی بھوک میں کمی آتی ہے جس سے آپ کا وزن کم ہوسکتا ہے۔

سیلینئم:

مشروم سیلینئم کا ایک بہت بڑا ذریعہ ہیں۔ سیلینئم جسم میں اینٹی آکسیڈینٹ کی طرح کام کرتا ہے۔ یہ مفت ریڈیکلز کی وجہ سے ہونے والے نقصان سے تحفظ فراہم کرتا ہے۔ اس سے مدافعتی نظام کو مضبوط بنانے میں بھی مدد ملتی ہے، اس سے کینسر اور دوسری بیماریوں سے بچاؤ میں بھی مدد مل سکتی ہے۔

سوڈیم سے محفوظ:

مشروم میں کوئی نمک نہیں پایا جاتا۔ اس کے علاوہ دوسرے پھلوں اور سبزیوں کی نسبت مشروم میں زیادہ مقدار میں پوٹاشیم پایا جاتا ہے جبکہ مشروم کی ایک قسم براؤن مشروم میں کیلے سے زیادہ پوٹاشیم ہوتا ہے۔

صحت سے مزید