• بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن

کورونا وائرس ویکسین کے سائیڈ افیکٹس سامنے آنا شروع

برطانیہ میں امریکی دواساز کمپنی فائزر کی لگائی جانے والی عالمی وبا کورونا وائرس کی ویکسین کے سائیڈ افیکٹ سامنے آنے لگے، کورونا وائرس ویکسین سے الرجی کے 2ممکنہ کیسز سامنے آگئے۔

برطانوی ہیلتھ ریگولیٹری اتھارٹی (این ایچ ایس) نے ہدایت دی ہے کہ سخت الرجی کی ہسٹری والوں کو فی الحال فائزر ویکسین نہیں لینی چاہیے۔

برطانوی ادارہ صحت نے شہریوں کو خبردار کیا ہے این ایچ ایس کے عملے کے دو ارکان میں الرجی کی شکایات سامنے آئی ہیں جن افراد کو الرجی رہ چکی ہے وہ ویکسین نہ لگوائیں۔

غیر ملکی میڈیا رپورٹ کے مطابق ویکسین لگوانے والوں میں سے 2افراد پر ویکسین نے الرجک ری ایکشن کیا۔


ویکسین لگوانے والے دونوں افراد کا تعلق طبی عملے سے ہے اور ری ایکشن کا شکار دونوں افراد کو پہلے سے الرجی کی شکایت تھی۔

برطانیہ دنیا کا پہلا ملک ہے جس نے فائزر ویکسین کا استعمال شروع کیا۔ ویکسین پرعوام الناس کا اعتماد قائم کرنے کی خاطر ملکہ برطانیہ اوران کے شوہر شہزادہ فلپ نے بھی ویکسین لگوانے کا اعلان کر رکھا ہے۔

خیال رہے کہ برطانیہ میں 2روز قبل کرونا ویکسین لگانے کا آغاز کیا گیا تھا جبکہ امریکی دواساز کمپنی کی تیار کردہ فائزر ویکسین کو ملک بھر میں استعمال کرنے کی منظوری دی تھی۔

صحت سے مزید