نازیہ حسن زندگی بھر مشکلات سے دوچار رہی: بھائی زوہیب حسن
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن

نازیہ حسن زندگی بھر مشکلات سے دوچار رہی: بھائی زوہیب حسن

20 برس قبل جہانِ فانی سے کُوچ کرنے والی پاپ گلوکارہ نازیہ حسن کے بھائی زوہیب حسن کا کہنا ہے کہ نازیہ اپنی چھوٹی سی زندگی میں مشکلات سے دوچار رہی۔

زوہیب حسن بہن کی 56 ویں سالگرہ کے موقع پر نازیہ سے جُڑی یادیں شیئر کر رہے ہیں، گزشتہ کئی دنوں سے ہی وہ یادگار اور نایاب تصاویر شیئر کر رہے ہیں تو وہیں انہوں نے کہا کہ اپنی مختصر زندگی میں دوسروں کی زندگیوں میں آسانی پیدا کرنے والی نازیہ خود زندگی بھر مشکلات کا شکار رہی۔


انہوں نے نازیہ کی زندگی کی مشکلات بتاتے ہوئے کہا کہ ’ایک شادی پھر طلاق، موذی مرض کینسر سے جنگ، ایک بیٹا جسے وہ کامیاب مرد دیکھنا چاہتی تھی، اور ایک بچوں کا اسپتال جسے قائم کرنے کیلئے وہ کوشاں رہی۔‘


زوہیب حسن نے گوگل کی جانب سے گزشتہ برس نازیہ حسن کی سالگرہ پر ڈوڈل کے ذریعے خراج عقیدت پیش کیے جانے کو بھی یاد کیا۔


اپنے حالیہ ویڈیو پیغام میں زوہیب حسن نے کہا کہ نازیہ کی یادداشتوں کو زندہ رکھنے والوں کے شکرگزار ہیں۔

انہوں نے کہا کہ سالگرہ ایک خوشی کا دن ہے لیکن ہم اس دن شدید غمزدہ ہوجاتے ہیں کہ اس دن نازیہ ہمارے ساتھ نہیں ہے۔


زوہیب حسن نے کہا کہ مداحوں کا پیار اور پیار بھرے پیغامات ہمیں حوصلہ دیتے ہیں۔

نازیہ حسن 3 اپریل 1965 کو کراچی میں پیدا ہوئیں، انہوں نے امریکن کالج آف لندن سے گریجویشن کیا اور پی ٹی وی کے مشہور پروگرام ’’سنگ سنگ چلے‘‘ سے موسیقی کی دنیا میں قدم رکھا۔

نازیہ حسن نے اپنے بھائی زوہیب کے ساتھ مشرقی اورمغربی موسیقی کے ملاپ سے ایسے گیت پیش کیے جو آج بھی شائقین موسیقی میں مقبول ہیں۔

بھارتی فلم قربانی میں شامل نازیہ کے گانے ’آپ جیسا کوئی میری زندگی میں آئے‘ نے گلوکارہ کو عالمگیر شہرت دی جبکہ نازیہ اور زوہیب کے البم ’ڈسکو دیوانے‘ نے فروخت کا ایک نیا ریکارڈ قائم کیا تھا۔

پھیپھڑوں کے سرطان کے مہلک مرض میں مبتلا نازیہ حسن 13 اگست 2000 کو دارِ فانی سے کوچ کرگئیں۔

خاص رپورٹ سے مزید