یوٹیلیٹی اسٹورز: چینی کیلئے کچھ اور اشیاء کی خریداری لازمی قرار
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن

یوٹیلیٹی اسٹورز: چینی کیلئے کچھ اور اشیاء کی خریداری لازمی قرار


یوٹیلیٹی اسٹورز پر چینی کی خریداری کے لیے کچھ اور اشیاء کی خریداری بھی لازمی قرار دے دی گئی ہے۔

بازاروں میں چینی مہنگی دستیاب ہے، غریب عوام یوٹیلیٹی اسٹورز پر سبسڈی والی چینی خریدنے کے لیے لمبی قطارو ں میں کھڑا ہونے پر مجبور ہیں۔

شہری کہتے ہیں کہ چینی تھوڑی مقدار میں مل رہی ہے اور اس پر بھی شرائط لاگو ہیں۔


یوٹیلیٹی اسٹورز پر چینی دستیاب ہے مگر کم وقت کے لیےاور یہ شرائط رکھی ہے کہ ایک پیکٹ چینی کے لیے سو ڈیڑھ سو روپے کی اور خریداری لازمی کرنا پڑے گی۔

دوسرا مسئلہ یہ ہے کہ چینی کے لیے لوگ زیادہ ہیں جبکہ یوٹیلیٹی اسٹوز پر اس کی مقدار کم ہے اس لیے ایک بندے کو ایک ہی پیکٹ دیا جارہا ہے۔

شہریوں کا کہنا ہے عوام کو بھی سدھرنے کی ضرورت ہے، کچھ لوگ دھوکے سے زیادہ چینی خریدکر دوسروں کی حق تلفی کر رہے ہیں۔

ایک شہری نے کہا کہ حکومت اچھا کام کر رہی ہے، عوام بگڑے ہوئے ہیں، وہ بچے بیٹھے ہوئے انھو ں نے 10،10،12،12 پیکٹ رکھے ہوئے ہیں ،یہ ہمیں عقل ہونی چاہیے کہ لوگو ں کا حق نہیں مارے ۔

یوٹیلیٹی اسٹورز انتظامیہ کی شکایت ہے کہ اکثر لوگ ڈھیروں ڈھیر چینی لے جاتے ہیں اور سستی چینی ضرورت مند تک نہیں پہنچتی، اسی لیے اب چینی کے ساتھ 100،200 روپے کی خریداری لازمی قرار دی ہے۔

تجارتی خبریں سے مزید