• بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن

لاپتا افراد کی بازیابی کے لئے جوائنٹ ایکشن کمیٹی کے تحت دھرنا جاری

کراچی(اسٹاف رپورٹر)جوائنٹ ایکشن کمیٹی فار شیعہ مسنگ پرسنز کا احتجاجی دھرنا مزار قائد پر سترہویں روز بھی جاری رہا،دھرنے میں مختلف سیاسی و مذہبی شخصیات نے شرکت کی اور لاپتہ افراد کے اہل خانہ سے اظہار یکجہتی کیا ۔احتجاجی دھرنے سے خطاب میں رہنما علامہ احمد اقبال رضوی کا کہنا تھا کہ مسنگ پرسنز کی بازیابی کے لیے مجلس وحدت مسلمین نے دھرنے کے ہر اقدام کی حمایت کا اعلان کیا ہے انہوں نے کہا کہ شرکاء دھرنا نے اپنے حوصلوں کو بلند رکھنا ہے ۔ ہم وہ ہیں جو ہمت نہیں ہارتے اور کبھی مایوس نہیں ہوتے ۔ لاپتہ افراد کی بازیابی کیلئے ہماری یہ جدوجہد آئینی وقانونی ہے کوئی کتنا بھی بڑا مجرم یا ملزم کیوں نہ ہو ایک آزاد ریاست میں اسے غائب نہیں کیا جا سکتا ۔ کسی کو جبری لاپتا کرنا جنگل کا قانون تو ہو سکتا ہے لیکن ایک آئینی ریاست ایسی لاقانونیت کی اجازت نہیں دے سکتی ۔ انہوں نے کہا کہ ہفتے میں ایک دن ملک کے ہر بڑے شہر میں لاپتا افراد کی حمایت میں دھرنے دیے جائیں گے تاکہ بے حس حکمرانوں کو جھنجھوڑ ا جا سکے ۔ جبری گمشدہ افراد کے لیے آواز بلند کرنا ہمارا شرعی فریضہ ہے ۔ علامہ احمد اقبال رضوی کا کہنا تھا احتجاجی دھرنے کو سترہ روز گزر چکے ہیں اس دوران مختلف اداروں سے میٹنگیں ہوئی ہیں سب نے یقین دہانی کرائی کہ لاپتہ افراد کی بازیابی کیلئے مثبت اقدامات کئے جائیں گے ۔