ابوظبی کے ولی عہد نے خاتون کار مکینک کو فون کیوں کیا؟
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن

ابوظبی کے ولی عہد نے خاتون کار مکینک کو فون کیوں کیا؟

ابوظبی کے ولی عہد شیخ محمد زاید ال نہیان نے پہلی اماراتی خاتون کار مکینک کو فون کرکے حیران کردیا۔

عرب میڈیا کی رپورٹ کے مطابق متحدہ عرب امارات کی ریاست شارجہ خاتون ھدیٰ المطروشی پہلی امارتی خاتون کار مکینک ہیں۔

مطروشی نے گاڑیوں کی ورکشاپ کھول کر پورے ملک کی توجہ کا مرکز بن گئی ہیں، ان کی شہرت ابوظبی کے ولی عہد کے کانوں تک بھی پہنچ گئی۔


انہوں نے کار مکینک خاتون سے اپنی گاڑی کے معائنے کے لیے رابطہ کیا اور تفصیلی گفتگو اور مطروشی کی حوصلہ افزائی بھی کی۔

شیخ محمد زاید ال نہیان نےھدیٰ المطروشی کو فون کیا اور مزاقاً کہا میرے پاس ایک گاڑی ہے، جو میں آپ کی ورکشاپ پر لانا چاہتا ہوں۔

کار مکینک خاتون نے ابوظبی کے ولی عہد کے منہ سے یہ الفاظ سن کر ہنس پڑی اور جواباً کہا ،’ بہتر، میں تیار ہوں‘۔

ابوظبی کے ولی عہد نے کار مکینک خاتون سے ورکشاپ سے متعلق مختلف نوعیت کے سوال کیے ،جن میں یہ بھی شامل تھا کہ آپ نے گاڑیوں کی ورکشاپ کب کھولی؟

المطروشی نے شیخ محمد زاید ال نہیان کو بتایا کہ اس کا شوق تو کئی برس تھا، ورکشاپ کھولنے کے حوالے سے کام گزشتہ برس شروع کیا۔

ولی عہد نے کار مکینک خاتون کو مبارک باد دی اور ان کے پروجیکٹ اور اقدام کو وطن عزیز کی دیگر خواتین اور لڑکیوں کے قابل فخر قرار دیا اور کہاکہ میں محنتی افراد کی مدد کے پرعزم ہوں۔

شیخ محمد زاید ال نہیان نے المطروشی سے کہا کہ ٹیلیفونک رابطے میں بات نہیں بنی میں ورکشاپ آؤں گا اور تم اہل خانہ سے ملاقات کروں گا۔

36 سالہ خاتون کار مکینک ابوظبی کے ولی عہد کی طرف سے ٹیلی فونک رابطے پر خوش ہیں اور اسے ناقابل بیان قرار دے رہی ہیں، وہ سمجھتی ہیں یہ بات کسی تمغے سے کم نہیں۔

بین الاقوامی خبریں سے مزید