Dr Shahid Hasan Siddiqui - Urdu Columns Pakistan | Jang Columns
| |
Home Page
ہفتہ 7؍ جمادی الثانی 1439ھ 24؍ فروری 2018ء
ڈاکٹر شاہد حسن صدیقی
February 12, 2018
لوٹی ہوئی دولت کی واپسی

سپریم کورٹ نے یکم فروری 2018 کو اس عزم کا اظہار کیا ہے کہ ملک میں رہائش پذیر پاکستانیوں نے لوٹی ہوئی یا ٹیکس چوری کی آمدنی کو غیر قانونی طریقوں سے ملک سے باہر منتقل کرکے جو اثاثے بنائے ہیں ان کو واپس لایا جائے گا۔ ہم اس ضمن میں عرض کریں گے کہ کم از کم گزشتہ دو دہائیوں سے مختلف حکومتیں اور ادارے اس عزم کا اظہار کرتے رہے ہیں کہ لوٹی ہوئی...
January 27, 2018
شیطانی چکر

جنوبی ایشیا کے تین بڑے ملک بھارت، پاکستان اور بنگلہ دیش ہیں، ان تینوں ملکوں کی برآمدات کے مندرجہ ذیل اعداد و شمار چشم کشا ہیں۔1۔بھارت کی سالانہ برآمدات260 ارب ڈالر ہیں جبکہ برآمدات اور جی ڈی پی کا تناسب11.5 فیصد ہے۔ 2۔بنگلہ دیش کی سالانہ برآمدات34.8 ارب ڈالر ہیں جبکہ آمدورفت اور جی ڈی پی کا تناسب 15فیصد ہے۔3۔پاکستان کی سالانہ...
January 11, 2018
امریکی دھمکیاں اور ہماری معاشی پالیسیاں

امریکی صدر اور ٹرمپ انتظامیہ کے پاکستان دشمن بیانات، پاکستان کی امداد میں حالیہ کٹوتیوں اور مزید اقدامات کی دھمکیوں کے جواب میں وطن عزیز میں ایک مرتبہ پھر وہی حکمت عملی اپنائی جارہی ہے جس پر گزشتہ 9سے زائد برسوں سے عمل کیا جاتا رہا ہے یعنی امریکہ کے خلاف لفظی گولہ باری کرنا لیکن عملاً دہشت گردی کی جنگ میں ’’مزید اور کرو‘‘ کے...
December 28, 2017
میر کیا سادہ ہیں بیمار ہوئے جس کے سبب

امریکی صدر ٹرمپ اور ان کی انتظامیہ کی پاکستان پر حالیہ الزام تراشیوں اور دھمکیوں کے ساتھ ہی وطن عزیز میں شعوری یا غیر شعوری طور پر ایک تباہ کن سوچ کو پروان چڑھایا جارہا ہے کہ پاکستان کو فوری طور پر ایک نجاتی پیکج کے لئے آئی ایم ایف سے رجوع کرنا چاہئے، حالانکہ کم از کم گزشتہ 29 برسوں کے تجربات یہ بتلاتے ہیں کہ استعماری مفادات کے تحفظ...
December 14, 2017
روپے کی قدر میں کمی۔ حقائق ، توقعات وخدشات

انٹربینک مارکیٹ میں ڈالر کے مقابلے میں روپے کی قدر میں زبردست کمی اسٹیٹ بینک نے ایک حکمت عملی کے تحت ایک ایسے وقت ہونے دی ہے جب آئی ایم ایف کا وفد پاکستان میں موجود تھا۔ اسٹیٹ بینک نے 8 دسمبر 2017کے پریس ریلیز میں کہا ہے کہ جاری کھاتے کے خسارے کے بڑھنے اور زرمبادلہ کے ذخائر کم ہونے کی وجہ سے روپے کی قدر گری ہے۔ یہ بات نوٹ کرنا اہم ہے کہ...
November 30, 2017
اسلامی بینکاری۔ چند دردمندانہ گزارشات

اسلامی جمہوریہ پاکستان کے آئین کی شق 38(ف) میں کہا گیا ہے کہ ریاست اس بات کو یقینی بنائے گی کہ جتنی جلدی ممکن ہو (معیشت سے) ربوٰ (سود) کا خاتمہ کردیا جائے۔ بدقسمتی سے ریاست کے تمام ستون دل و عمل سے نہیں چاہتے کہ ملکی معیشت سے سود کا خاتمہ ہو، کیونکہ اس سے مالدار اور طاقتور طبقوں کے ناجائز مفادات پر ضرب پڑے گی۔ وطن عزیز میں بہت زور و شور...
November 17, 2017
پاناما لیکس۔ ملکی پاناماز مسلسل نظر انداز کیوں؟

پاناما اور پیراڈائز لیکس کے منظر عام پر آنے سے بہت پہلے 1997ء میں اسلام آباد میں متعین امریکی قونصل جنرل نے دو مرتبہ کہا تھا کہ پاکستان سے 100؍ارب ڈالر لوٹ کر بیرونی ملکوں میں منتقل کردئیے گئے ہیں اور اگر یہ رقوم واپس مل جائیں تو پاکستان نہ صرف اپنے تمام بیرونی قرضے ادا کرسکتا ہے بلکہ آئندہ بھی بیرونی قرضوں سے بے نیاز ہوسکتا ہے۔...
November 02, 2017
بدحال معیشت ۔ کیا صوبے ذمہ دار نہیں ؟

اب سے تقریباً 7برس قبل قومی مالیاتی ایوارڈ کے اجرا اور بعد میں آئین میں18ویں ترمیم کے بعد سے صوبوں کے مالی وسائل اور اختیارات میں اضافہ ہوا ہے۔ تعلیم و صحت بشمول خدمات پر ٹیکس جیسے شعبے بھی صوبوں کے دائرہ اختیار میں آ گئے ہیں۔ یہ حقیقت بھی اپنی جگہ برقرار ہے کہ ان 7برسوں میں بھی معیشت کی مجموعی کارکردگی مایوس کن ہی رہی ہے۔ گزشتہ...
October 20, 2017
قومی سلامتی ، معیشت اور نیشنل ایکشن پلان

 معیشت کی جھلکیاںبری فوج کے سربراہ جنرل قمر جاوید باجوہ نے 12اکتوبر2017کو یہ حقیقت پسندانہ بیان دیاتھا کہ قومی سلامتی اور معیشت ایک دوسرے سے منسلک ہونے کے ناطے جڑواں حقیقت ہیں۔ انہوں نے بہرحال مزید کہاتھا کہ اب تمام ریاستیں پرانی سوچ پر نظر ثانی کرتے ہوئے معاشی استحکام اور قومی سلامتی کے درمیان توازن رکھنے پر توجہ دے رہی ہیں، آج...
October 06, 2017
استعماری مفادات کا تحفظ،آخر کب تک؟

اب سے 16؍برس قبل 7؍اکتوبر 2001 کو امریکی صدر بش نے افغانستان پر فضائی حملے شروع کرنے کا اعلان کیا تھا۔ اس کے صرف چند گھنٹے بعد ہی آمر پرویز مشرف نے ان امریکی حملوں میں معاونت کا اعلان کیا تھا اور 10؍اکتوبر 2001ء کو امریکہ کے جنگی جہاز اور ہیلی کاپٹرز پاکستان کے جیکب آباد ائیر پورٹ پر اتر گئے جہاں سے اڑ کر افغانستان پر خوفناک فضائی حملے...
September 21, 2017
تجھ کو پرائی کیا پڑی اپنی نبیڑتو

یہ بات کوئی راز نہیں کہ وطن عزیز کی سلامتی کوجو سنگین خطرات درپیش ہیں وہ بنیادی طور پر مندرجہ ذیل تین وجوہات کی بناپر ہیں 1۔ گزشتہ 16برسوں سے امریکی حکمت عملی کے تحت دہشت گردی کی جنگ لڑتے چلے جانا حالانکہ نائن الیون کے فوراً بعد ہی یہ بات عیاں ہوگئی تھی کہ اس جنگ کا امریکی ہدف خود پاکستان بھی ہے۔2۔ وفاق اور چاروں صوبوں کا ایسی معاشی...
September 08, 2017
ناپاک امریکی عزائم۔پرانی غلطیاں پھر نہ دہرائیں

گزشتہ 16برسوں سے امریکی ایجنڈے کے مطابق دہشت گردی کے خاتمے کے نام پر جنگ لڑتے چلے جانا پاکستان کیلئے تباہی اور خسارے کا سودا رہا ہے۔ امریکی صدر ٹرمپ کے 22؍اگست 2017کے پاکستان دشمن پالیسی بیان کے بعد جو نیوگریٹ گیم کے تحت ناپاک امریکی عزائم کا آئینہ دار ہے، پاکستان نے جو ردّعمل ظاہر کیا ہے اس سے ریکارڈ تو درست ہو سکتا ہے، قوم کا مورال...
August 25, 2017
آزادی کے 70برس، کیا پایا کیا کھویا؟

اب سے 70برس قبل آزادی کے وقت جو علاقے پاکستان کے حصے میں آئے ان میں انفرا سٹرکچر نہ ہونے کے برابر تھا۔ نوزائیدہ مملکت کے پاس مالی وسائل کم اور مسائل کی بھرمار تھی۔ گزشتہ 7دہائیوں میں بہرحال پاکستان نے متعدد شعبوں میں قابل قدر ترقی کی ہے مثلاً (1) مالی سال 1950 میں پاکستان کی جی ڈی پی تقریباً 10ارب روپے تھی جو بڑھ کر 31862ارب روپے تک پہنچ...
August 11, 2017
کیا زمانے میں پنپنے کی یہی باتیں ہیں؟

عالمی مالیاتی اداروں کی رپورٹوں کے مطابق 1980ء سے 2017ء کے 37برسوں میں جنوبی ایشیا کے کچھ ملکوں بشمول بنگلہ دیش کی معیشت کی اوسط شرح نمو پاکستان سے زیادہ رہی۔ یہ بات بھی نوٹ کرنا اہم ہے کہ 1958ء سے 2008 کے 50برسوں میں سے تقریباً 32برسوں میں ڈکٹیٹر اقتدار پر قابض رہے۔ ان برسوں کے دوران جن 4برسوں میں پاکستانی معیشت کی شرح نموسست ترین رہی وہ یہ...