Dr Shahid Hasan Siddiqui - Urdu Columns Pakistan | Jang Columns
| |
Home Page
جمعرات 04 ربیع الاوّل 1439ھ 23 نومبر 2017ء
ڈاکٹر شاہد حسن صدیقی
November 17, 2017
پاناما لیکس۔ ملکی پاناماز مسلسل نظر انداز کیوں؟

پاناما اور پیراڈائز لیکس کے منظر عام پر آنے سے بہت پہلے 1997ء میں اسلام آباد میں متعین امریکی قونصل جنرل نے دو مرتبہ کہا تھا کہ پاکستان سے 100؍ارب ڈالر لوٹ کر بیرونی ملکوں میں منتقل کردئیے گئے ہیں اور اگر یہ رقوم واپس مل جائیں تو پاکستان نہ صرف اپنے تمام بیرونی قرضے ادا کرسکتا ہے بلکہ آئندہ بھی بیرونی قرضوں سے بے نیاز ہوسکتا ہے۔...
November 02, 2017
بدحال معیشت ۔ کیا صوبے ذمہ دار نہیں ؟

اب سے تقریباً 7برس قبل قومی مالیاتی ایوارڈ کے اجرا اور بعد میں آئین میں18ویں ترمیم کے بعد سے صوبوں کے مالی وسائل اور اختیارات میں اضافہ ہوا ہے۔ تعلیم و صحت بشمول خدمات پر ٹیکس جیسے شعبے بھی صوبوں کے دائرہ اختیار میں آ گئے ہیں۔ یہ حقیقت بھی اپنی جگہ برقرار ہے کہ ان 7برسوں میں بھی معیشت کی مجموعی کارکردگی مایوس کن ہی رہی ہے۔ گزشتہ...
October 20, 2017
قومی سلامتی ، معیشت اور نیشنل ایکشن پلان

 معیشت کی جھلکیاںبری فوج کے سربراہ جنرل قمر جاوید باجوہ نے 12اکتوبر2017کو یہ حقیقت پسندانہ بیان دیاتھا کہ قومی سلامتی اور معیشت ایک دوسرے سے منسلک ہونے کے ناطے جڑواں حقیقت ہیں۔ انہوں نے بہرحال مزید کہاتھا کہ اب تمام ریاستیں پرانی سوچ پر نظر ثانی کرتے ہوئے معاشی استحکام اور قومی سلامتی کے درمیان توازن رکھنے پر توجہ دے رہی ہیں، آج...
October 06, 2017
استعماری مفادات کا تحفظ،آخر کب تک؟

اب سے 16؍برس قبل 7؍اکتوبر 2001 کو امریکی صدر بش نے افغانستان پر فضائی حملے شروع کرنے کا اعلان کیا تھا۔ اس کے صرف چند گھنٹے بعد ہی آمر پرویز مشرف نے ان امریکی حملوں میں معاونت کا اعلان کیا تھا اور 10؍اکتوبر 2001ء کو امریکہ کے جنگی جہاز اور ہیلی کاپٹرز پاکستان کے جیکب آباد ائیر پورٹ پر اتر گئے جہاں سے اڑ کر افغانستان پر خوفناک فضائی حملے...
September 21, 2017
تجھ کو پرائی کیا پڑی اپنی نبیڑتو

یہ بات کوئی راز نہیں کہ وطن عزیز کی سلامتی کوجو سنگین خطرات درپیش ہیں وہ بنیادی طور پر مندرجہ ذیل تین وجوہات کی بناپر ہیں 1۔ گزشتہ 16برسوں سے امریکی حکمت عملی کے تحت دہشت گردی کی جنگ لڑتے چلے جانا حالانکہ نائن الیون کے فوراً بعد ہی یہ بات عیاں ہوگئی تھی کہ اس جنگ کا امریکی ہدف خود پاکستان بھی ہے۔2۔ وفاق اور چاروں صوبوں کا ایسی معاشی...
September 08, 2017
ناپاک امریکی عزائم۔پرانی غلطیاں پھر نہ دہرائیں

گزشتہ 16برسوں سے امریکی ایجنڈے کے مطابق دہشت گردی کے خاتمے کے نام پر جنگ لڑتے چلے جانا پاکستان کیلئے تباہی اور خسارے کا سودا رہا ہے۔ امریکی صدر ٹرمپ کے 22؍اگست 2017کے پاکستان دشمن پالیسی بیان کے بعد جو نیوگریٹ گیم کے تحت ناپاک امریکی عزائم کا آئینہ دار ہے، پاکستان نے جو ردّعمل ظاہر کیا ہے اس سے ریکارڈ تو درست ہو سکتا ہے، قوم کا مورال...
August 25, 2017
آزادی کے 70برس، کیا پایا کیا کھویا؟

اب سے 70برس قبل آزادی کے وقت جو علاقے پاکستان کے حصے میں آئے ان میں انفرا سٹرکچر نہ ہونے کے برابر تھا۔ نوزائیدہ مملکت کے پاس مالی وسائل کم اور مسائل کی بھرمار تھی۔ گزشتہ 7دہائیوں میں بہرحال پاکستان نے متعدد شعبوں میں قابل قدر ترقی کی ہے مثلاً (1) مالی سال 1950 میں پاکستان کی جی ڈی پی تقریباً 10ارب روپے تھی جو بڑھ کر 31862ارب روپے تک پہنچ...
August 11, 2017
کیا زمانے میں پنپنے کی یہی باتیں ہیں؟

عالمی مالیاتی اداروں کی رپورٹوں کے مطابق 1980ء سے 2017ء کے 37برسوں میں جنوبی ایشیا کے کچھ ملکوں بشمول بنگلہ دیش کی معیشت کی اوسط شرح نمو پاکستان سے زیادہ رہی۔ یہ بات بھی نوٹ کرنا اہم ہے کہ 1958ء سے 2008 کے 50برسوں میں سے تقریباً 32برسوں میں ڈکٹیٹر اقتدار پر قابض رہے۔ ان برسوں کے دوران جن 4برسوں میں پاکستانی معیشت کی شرح نموسست ترین رہی وہ یہ...
July 27, 2017
سی پیک۔ پاناما اسکینڈل اور نیوگریٹ گیم

قومی مفادات کے تحفظ کیلئے خود انحصاری کے اصولوں پر مبنی ایسی معاشی پالیسیاں اپنانا ہمارے لئے ناگزیر ہوگیا ہے جن کے نتیجے میں معیشت کی شرح نمو میں پائیدار بہتری آئے، برآمدات میں تیزی سے اضافہ ہو اور عام آدمی کی حالت بہتر ہو۔ گزشتہ 12برسوں میں برآمدات کے شعبے میں پاکستان کی کارکردگی انتہائی مایوس کن رہی ہے۔ گزشتہ 10برسوں میں...
July 13, 2017
روپے کی قدر میں کمی، پراسراریت اور اعتماد کا فقدان

یہ بات حیران کن ہے کہ 5 جولائی 2017ء کو انٹر بینک مارکیٹ میں ڈالر کے مقابلے میں روپے کی شرح مبادلہ گزشتہ روز کی سطح 104.90 روپے سے بڑھ کر 108.25 روپے ہوگئی یعنی روپے کی قدر میں 3.1 فی صد یا 3.35 روپے فی ڈالر کی زبردست کمی ہوئی۔ یہ بات بہرحال معنی خیز ہے کہ کھلی منڈی میں یہ کمی صرف 1.75 روپے فی ڈالر ہوئی۔ روپے کی قدر میں اچانک کمی کروا کر کچھ اداروں...
June 29, 2017
پاناما:خدارا! اصل کام بھی تو کریں

یہ قدرت کی عجب ستم ظریفی ہے کہ ایک طرف گزشتہ کئی ماہ سے سیاستدانوں، ریاست کے اہم اداروں، الیکٹرانک میڈیا اور اعلیٰ عدلیہ سمیت پوری قوم کی توجّہ پانامالیکس پر مذکور ہے اور وزیراعظم سے پوچھا جا رہا ہے کہ ان کے بچّوں نے ملک سے باہر جو جائیدادیں بنائی ہیں ان کیلئے ان کے پاس پیسہ کہاں سے آیا اور دوسری طرف 7؍دسمبر 2016کو صدر مملکت نے انکم...
June 16, 2017
18ویں ترمیم کی روح کے منافی صوبائی بجٹ

مالی سال2016-17کے اقتصادی سروے کے ابتدائی صفحات میں وزارت خزانہ نے اس بات کی تکرار کی ہے کہ اس مالی سال میں معیشت کی شرح نمو5.28فیصد رہی جو گزشتہ10برسوں میں سب سے زیادہ ہے۔یہ بہرحال کوئی قابل ذکر کامیابی نہیں ہے کیونکہ اس مالی سال میں پاکستانی معیشت کی شرح نمو کا ہدف5.7فیصد تھا جو حاصل نہیں کیا جاسکا۔ یہی نہیں، اس مالی سال میں بھارت اور...
June 01, 2017
بجٹ ۔وہی چال بے ڈھنگی جو پہلے تھی سو اب بھی ہے

وزیر خزانہ نے 2017-18کا جو بجٹ قومی اسمبلی میں پیش کیا ہے وہ بنیادی طور پر ان ہی خطوط پر وضع کیا گیا ہے جن کے نتیجے میں گزشتہ چار برسوں سے معیشت کی شرح نمو کے حکومت کے خود اپنے مقرر کردہ اہداف حاصل نہیں ہو سکے، برآمدات 2014سے مسلسل گرتی رہیں اور ٹیکسوں کی وصولی و بجٹ خسارے سمیت متعدد معاشی اہداف عملاً حاصل نہیں ہوسکے۔ بدقسمتی سے وہ...
May 18, 2017
سی پیک۔ تو خود تقدیر یزداں کیوں نہیں ہے

چند روز بعد اگلے مالی سال کے وفاقی اور صوبائی بجٹ ایک ایسے موقع پر پیش کئے جائیں گے جب معیشت کے شعبے میں کچھ منفی رجحانات واضح طور پر نظر آرہے ہیں۔ 18؍ویں آئینی ترمیم اور ساتویں قومی مالیاتی کمیشن ایوارڈ کے بعد صوبوں کو زیادہ خود مختاری حاصل ہوگئی ہے اور تعلیم و صحت کے شعبے بھی انہیں منتقل ہوگئے ہیں جبکہ وفاق سے انہیں زیادہ رقوم...