• بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن

آریان خان نے درخواستِ ضمانت میں ہائی کورٹ کو کیا وضاحت دی؟

بالی ووڈ اسٹار شاہ رخ خان کے بیٹے آریان خان کی جانب سے ہائی کورٹ میں دائر اپیل میں کہا گیا کہ تفتیشی افسر نے ان کی واٹس ایپ چیٹس کی جس طرح کی تشریح کی وہ بلاجواز اور غلط ہے۔

بھارتی میڈیا رپورٹ کے مطابق ممبئی ہائی کورٹ 26 اکتوبر کو آریان کی ضمانت کی درخواست پر سماعت کرے گی ۔

آریان خان نے خصوصی این ڈی پی ایس عدالت کی جانب سے ان کی ضمانت کی درخواست مسترد ہونے کے فوراً بعد ہائی کورٹ کا رخ کیا تھا، ان کی ہائی کورٹ کی درخواست کی تفصیلات اب منظر عام پر آ گئی ہیں۔

آریان خان کا اپنی اپیل میں کہنا ہے کہ نارکوٹکس کنٹرول بیورو نے ان کی واٹس ایپ چیٹس کی غلط تشریح کی ہے تاکہ انہیں منشیات ضبط کرنے کے معاملے میں ملوث قرار دیا جاسکے۔

انہوں نے بتایاکہ این سی بی کی جانب سے جن واٹس ایپ چیٹس کو بنیاد بنایاجا رہا ہے وہ سابقہ ہیں ۔

اپیل میں مزید کہا گیا ہے کہ کسی بھی طرح ان کی مبینہ واٹس ایپ چیٹس کو کسی سازش سےنہیں جوڑا جا سکتا جس کے لیے کو ئی خفیہ معلومات موصول ہوئی ہوں۔

یاد رہے کہ آریان خان کو 3 اکتوبر کو گوا جانے والے کروز سے گرفتار کیا گیا تھا جہاں ایک پارٹی کی میزبانی کی جا رہی تھی۔

گرفتاری کے بعد آریان کے پاس سے کسی قسم کی منشیات برآمد نہیں ہوئیں جبکہ ان کے دوست ارباز مرچنٹ کے پاس سے چھ گرام چرس برآمد ہوئی۔

آریان خان پر منشیات کے نیٹ ورک کا حصہ ہونے کے الزامات ان کی واٹس ایپ چیٹ کی بنیاد پر لگائے گئے ہیں ، ان کے علاوہ بالی ووڈ اداکارہ اننیا پانڈے کو بھی واٹس ایپ چیٹ کی بنیاد پر این سی بی کی جانب سے پوچھ گچھ کے لیے طلب کیا گیا۔

انٹرٹینمنٹ سے مزید