آپ آف لائن ہیں
اتوار13؍ذیقعد 1441ھ 5؍جولائی 2020ء
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیئرمین و ایگزیکٹوایڈیٹر: میر جاوید رحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن
Jang Group

شازیہ ناصر

پہلے زمانے میں لوگ چہل قدمی کرنے کے لیے پارک جانے کاوقت نکالتے تھےلیکن اس افراتفری اور مصروف ترین دور میں چہل قدمی کے لیے پارک جانا خاصا مشکل ہو گیا ہے ۔تو اس میں پریشان ہونے کی ضرورت نہیں ہے ۔آ پ گھر کے آنگن میں بھی حسین و دل کش باغیچہ بنا سکتی ہیں ۔ذیل میں آپ کو باغیچہ بنانے کے طریقے کے بارے میں بتایا جارہا ہے ۔اس پر عمل کریں اور گھر میں حاصل کریں تازہ ہوا ۔

اگر آپ کے فلیٹ یا گھر میں جگہ کم ہوتو عمودی سطح کا چھوٹا سا باغیچہ بنایا جا سکتا ہے ۔چھوٹے چھوٹے گملوں میں پسندیدہ پھول لگائیے۔کسی بھی پودے کا انتخاب کرنے سے پہلے اس کا سائز ذہن میں رکھیں۔دیواروں پر سجانے کے لئے مختلف پودے استعمال کئے جا سکتے ہیں اور دیوار کے ساتھ لکڑی کی بینچ اور چند آرائشی اشیاء مثلاً مٹی کے لیمپ ،مجسمے میں آبشار وغیرہ لگائی جاسکتی ہے۔لمبی سبز خوردنی پھلیوں اور لمبے ڈنڈوں کی مدد سے پھولوں کی بیلوں کو اوپر تک بڑھایا جا سکتا ہے۔مناسب دیکھ بھال سے یہ مختصر سے رقبے کا باغیچہ بہار دکھلائے گا۔اس کے علاوہ آپ گھر کا ایک کونا مخصوص کرکے ایک ٹرے میں مختلف پودے لگاسکتی ہیں، اس ٹرے کو فرش اور لکڑی کے ڈیک کے ساتھ سجایا جا سکتا ہے۔

لکڑی کی ایک بینچ آنگن میں رکھ کر شام کی چائے کا لطف لیا جا سکتا ہے۔جڑی بوٹیوں مثلاً پودینا ،روز میری ،نیاز بو اور باسل جیسے پودوں کا استعمال گھر کے داخلی حصے اور راہداری کے لئے بہترین ہے۔ان جگہوں پر ایسے پودوں کا انتخاب گھر کو ہرابھرا اور کشادہ ہی نہیں باذوق مکینوں کی رہائش گا ہ بھی ظاہر کرتا ہے ۔اس کے علاوہ ان جڑی بوٹیوں کے فوائد بھی بہت ہیں۔یہ حشرات الارض سے محفوظ بھی رکھتی ہیں ۔غذائی صورت میں بھی ان کا استعمال کیا جاتاہے ۔آپ ٹرالیوں میں پودیں لگا سکتی ہیں ۔مارکیٹ میں ایسی مخصوص ٹرالیاں موجود ہیں جو دو سے تین خانوں پر مشتمل ہوتی ہیں۔اوپر والے خانے میں پودے دوسرے میں باغبانی کا سامان رکھا جا تا ہے۔ان ٹرالیوں کے ذریعے لان کو خوبصورت تاثر ملتا ہے اور باغبانی کاذوق بیدار ہوتا ہے۔ پھلوں یا سبزیوں کی پیٹیوں میں سانچے بنا کر بھی گھریلو کاشت کاری کر سکتی ہیں ۔

لیموں ،مرچیں ،ہرا دھنیا ،پودینا اور ٹماٹر لگا کر آپ اپنے کچن کا بجٹ بہتر کرسکتی ہیں ۔بے شک یہ باغبانی طویل دورانئے کا ایک سلسلہ ہے ،مگر یہ انتہائی مفید تھراپی ہے۔خاص کر جن دنوں میں کوئی سبزی نایاب ہو جائے،مہنگے داموں مل رہی ہو یا اچانک کوئی چیز تیار کرنی ہو اور آپ بازار نہ جا سکتی ہوں تو یہی گھریلو کا شتکاری منٹوں میں مسئلہ حل کردیتی ہے۔آپ کا گھر بھی ماحولیاتی آلودگی سے محفوظ رہے گا۔آپ کو تازہ ہوا کی تلاش میں کئی سومیل دور چل کر کسی بڑے پارک میں نہیں جانا پڑے گا۔تو انتظار کس بات کا ہے ،جلدی سے بنائیں گھر میںدل کش باغیچہ ۔