آپ آف لائن ہیں
ہفتہ6؍ربیع الاوّل 1442ھ 24؍اکتوبر 2020ء
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیئرمین و ایگزیکٹوایڈیٹر: میر جاوید رحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن
Jang Group

فرانس میں ایک بار پھر کورونا وائرس کے پھیلاؤ میں تیزی

عالمی سطح پر کورونا وائرس کی وبا سے متاثر ہونے والوں کی تعداد تین کروڑ 28 لاکھ سے زائد ہو گئی ہے، جبکہ ہلاکتیں 10 لاکھ کے قریپ پہنچ چکی ہیں۔

فرانسیسی میڈیا کے مطابق فرانس کے ایک صف اول کے ماہر صحت ڈاکٹر پیٹرک بوئے نے کہا ہے کہ اگر صورتحال ایسی ہی رہی تو پھر ملک کو کئی ماہ تک کورونا وائرس  کا سامنا کرنا پڑے گا اور صحت کا نظام بھی متاثر ہوگا۔

فرانس میں نیشنل کونسل آف آرڈر آف ڈاکٹرز کے سربراہ نے میڈیا  کو بتایا کہ ’وبا کی دوسری لہر ہماری توقع کے برعکس بہت تیزی سے آ رہی ہے۔‘

انہوں نے کہا کہ ’رواں ہفتے وزیر صحت آلیور وران نے اس حوالے سے خبردار بھی کیا تھا اور کہا تھا کہ فرانس کو  موسمِ خزاں اور سرما میں کئی ماہ تک وبا کا سامنا کرنا پڑے گا۔‘

ڈاکٹر  پیٹرک بوئے نے مزید کہا کہ اس وقت طبی عملہ زیادہ تعداد میں دستیاب نہیں ہوگا اور یہ بڑی مشکل صورتحال ہوگی، طبی عملے  بہت سے لوگ تھک چکے ہیں یا پھر ٹراما سے گزر رہے ہیں۔

واضح رہے کہ فرانس میں ہفتے کو 14 ہزار سے زائد کیسز رپورٹ ہوئے تھے جن کی تعداد گذشتہ دو روز کے مقابلے میں کچھ کم تھی۔ لیکن پچھلے ایک ہفتے میں چار ہزار 102 افراد ہسپتال داخل ہوئے جن میں سے 763 کی حالت تشویشناک ہے جبکہ ملک میں وبا سے ہلاک ہونے والوں کی تعداد 31 ہزار 700 ہوگئی ہے۔

دوسری جانب آسٹریلیا کے وزیراعظم نے کہا ہے کہ ان کے ملک میں وبا کا گڑھ سمجھی جانے والی ریاست وکٹوریہ میں اتوار کو 20 سے کم کیسز رپورٹ ہونے کے بعد کورونا پابندیوں میں نرمی کی جائے گی۔

دریں اثنا جان ہاپکنز یونیورسٹی کے مطابق امریکا میں وبا سے 70 لاکھ سے زیادہ لوگ متاثر ہوئے ہیں اور اموات دو لاکھ چار ہزار سے بڑھ گئی ہیں۔

بھارت میں کورونا متاثرین 60 لاکھ کے قریب ہیں اور ہلاکتیں 94 ہزار سے زائد ہیں۔

اسی طرح برازیل میں وبا سے ہلاک ہونے والوں کی تعداد ایک لاکھ 41 سے زیادہ ہے اور 47 لاکھ سے زائد متاثرین ہیں۔

بین الاقوامی خبریں سے مزید