آپ آف لائن ہیں
جمعہ5؍ربیع الاوّل 1442ھ 23؍اکتوبر2020ء
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیئرمین و ایگزیکٹوایڈیٹر: میر جاوید رحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن
Jang Group

اندرون سندھ سے ووٹ لینے والی پیپلز پارٹی نے کراچی کیلئے کچھ نہیں کیا، ن لیگ کی ساری توجہ بالائی پنجاب پر تھی، عمران خان


اندرون سندھ سے ووٹ لینے والی پیپلز پارٹی نے کراچی کیلئے کچھ نہیں کیا، عمران خان


پشاور(ایجنسیاں)وزیر اعظم عمران خان نے کہا ہے کہ صوبوں کی جانب سے این ایف سی ایوارڈ میں سے تین فیصد حصہ قبائلی اضلاع کیلئے مختص کرنے کا وعدہ کیاگیاتھا لیکن اب بدقسمتی سے اس وعدے سے انحراف کیا جا رہا ہے جو قبائلی اضلاع کے ساتھ زیادتی ہے‘ایسا نہیں ہونا چاہیے کہ ایک علاقہ اوپر چلا جائے اور باقی سب نیچے چلے جائیں۔

اندرون سندھ سے ووٹ لینے والی پیپلزپارٹی نے کراچی کیلئے کچھ نہیں کیا‘ اسی لیے کراچی کے برے حالات ہیں‘ پنجاب میں بھی ایساہی ہوا‘ن لیگ کی ساری توجہ بالائی پنجاب پر تھی ‘صرف ایک شہر لاہور کو اوپر اٹھایا گیا باقی سب پیچھے رہ گئے‘غیرملکی دشمن فاٹاکے خیبرپختونخوامیں انضمام کے مخالف ہیں۔

ماضی کے حکمرانوں نے ملک کو قرضوں کی دلدل میں دھکیلا‘یہاں لوٹ مار کرکے لندن میں محلات بنائے‘ افغانستان میں امن سے قبائلی علاقوں میں تبدیلی آئے گی ‘وسط ایشیا سے رابطے بہتر ہوں گے ‘ روزگار اور تجارت بڑھے گی ‘کمزورطبقے کو اوپر لانا ریاست کی ذمہ داری ہے ‘ہماری کوشش ہے کہ قبائلی علاقوں میں زیادہ سے زیادہ فنڈزلگائیں ۔

تفصیلات کے مطابق ضلع مہمند میں ناحقئی سرنگ اور شیخ زید روڈ کے افتتاح کے موقع پرعمائدین سے خطاب کرتے ہوئےوزیر اعظم نے کہا کہ ہماری تمام پالیسیوں کا محور کمزور طبقوں کی بحالی ہے۔ انہوں نے کہاکہ ملک دشمن قوتیں مختلف طریقوں سے انتشارپیدا کرنے کی کوششیں کرتی ہیں تاکہ پاکستان بالخصوص قبائلی علاقوں کی ترقی کے عمل کو روکا جا سکے اور ہم نے قبائلی باشندوں کے تعاون سے ان سازشوں کو ناکام بنانا ہے۔

خدشہ ہے کہ ہمارے دشمن ان لوگوں کے ساتھ پوری طرح سے رابطے میں ہیں جو نہیں چاہتے کہ قبائلی علاقوں کا انضمام ہو، وہ عناصر پوری کوشش کریں گے کوئی نہ کوئی انتشار پھیلایا جائے‘ملک سے باہر دشمن ایسے عناصر کو فنڈنگ کرتے ہیں، اور بار بار انضمام میں رکاوٹیں ڈالنے کی کوشش کرتے ہیں، کوشش ہے کہ قبائلی علاقے کی ترقی میں کوئی کسر نہ چھوڑیں۔ 

عمران خان نے کہا کہ اسمگلنگ پاکستان کو تباہ کررہی ہے‘جب تک ایکسپورٹس نہیں بڑھائیں گے قر ضوں کی دلدل سے نہیں نکل سکتے، اس لیے ہمیں اسمگلنگ کو ہر صورت روکنا ہے۔ ہماری بھرپور کوشش ہے کہ افغان امن عمل کامیابی سے ہمکنار ہو‘ قبائلی علاقوں میں بھی خوشحالی کا دور شروع نہ ہو نے کی وجہ افغانستان کے حالات ہیں۔ 

دریں اثناء باجوڑمیں قبائلی عمائدین سے خطاب کرتے ہوئے عمران خان نے کہاکہ ماضی کے حکمرانوں نے ملک کو قرضوں کی دلدل میں دھکیلا اور یہاں لوٹ مارکر کے لندن میں محلات بنائے۔قبائلی اضلاع کا خیبر پختونخوا میں انضمام نہ ہوتا تویہ علاقے ترقی کی دوڑ میں پیچھے رہ جاتے۔ سڑکیں بننے سے رابطے بہتر ہوں گے ‘تجارت میں بھی آسانی ہوگی‘قبائلی علاقوں میں تعلیم کو عام کریں گے اور لوگوں کو ہنر سکھائیں گے۔

اہم خبریں سے مزید