آپ آف لائن ہیں
جمعرات9؍ رمضان المبارک 1442ھ22؍اپریل 2021ء
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن
Jang Group

خیبر پختونخواہ کی خاتون پولیس آفیسر کا بڑا کارنامہ

صائمہ شریف خیبر پختونخواہ سے تعلق رکھنے والی پہلی خاتون پولیس آفیسر ہیں جو اقوام متحدہ کے امن مشن میں حصہ لینے جارہی ہیں۔

صائمہ شریف کا تعلق پاکستان کے صوبے خیبر پختونخواہ سے ہے اور ساتھ ہی وہ اپنے صوبے کی پہلی خاتون پولیس آفیسر ہیں جو اقوام متحدہ کے امن مشن میں حصہ لینے کے لیے سوڈان جارہی ہیں۔


صائمہ شریف پشاور پولیس کی واحد خاتون آفیسر ہیں جو سال 2020 میں اقوام متحدہ کے عالمی امن مشن میں پاکستان کی نمائندگی کریں گی۔

صائمہ 7 بہنوں اور چار بھائیوں کی دلیر بہن ہیں، صائمہ کے جوان بھائی بھی پشاور پولیس کے شہید ہیں، بہادر سپاہی معین پشاور میں شدت پسندوں کے حملے کے دوران چند سال پہلے اپنی جان کا نذرانہ پیش کر کے شہادت کا رتبہ پا چکے ہیں۔

بہادروں کے خاندان میں نام پیدا کرنے والی صائمہ شریف نہ صرف بوڑھے والدین کا سہارا ہیں بلکہ اپنے خاندان کے لئے باعث فخر بھی ہیں ۔

صائمہ شریف نے 2007 میں خیبر پختونخواہ پولیس میں کانسٹیبل کی حیثیت سے شمولیت اختیار کی اور 2019 تک اپنے بھائی کے مقصد کو جاری رکھا۔

بعد ازاں انہوں نے اقوام متحدہ کے مشن امتحان میں حصہ لیا جس میں انہیں کامیابی حاصل ہوئی اور اب وہ اقوام متحدہ کے امن مشن کے لیے سوڈان جارہی ہیں۔

صائمہ شریف کا کہنا ہے کہ مجھے ایک شہید کی بہن ہونے پر فخر ہے اور مجھے اس بات پر بھی فخر ہے کہ میں پہلی خیبر پختونخواہ کی خاتون پولیس آفیسر ہوں جو اقوام متحدہ کے امن مشن میں پاکستان کی نمائندگی کرے گا۔

ان کا کہنا ہے کہ خیبر پختونخواہ میں پردے کا ماحول ہے لیکن میں نے اس مشن کے لیے اسے بھی کراس کیا ہے اور اب میری بھی اپنے بھائی کی طرح شہادت کے رتبے کی خواہش ہے۔

صائمہ شریف کا مزید کہنا ہے کہ میں ایک سال کے لیے اقوام متحدہ کے امن مشن کے تحت سوڈان میں امن اور سیکیورٹی کے لیےجارہی ہوں جہاں جانے کا میرا اصل مقصد اپنے ملک کا نام روشن کرنا ہے۔

خاص رپورٹ سے مزید