آپ آف لائن ہیں
بدھ6؍ جمادی الثانی 1442ھ 20؍جنوری 2021ء
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیئرمین و ایگزیکٹوایڈیٹر: میر جاوید رحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن
Jang Group

آسٹریا میں اسکول 25 جنوری کو کھولے جائیں گے، وزیر تعلیم

ویانا(اکرم باجوہ) آسٹریا کے وزیرتعلیم ہینز فیمن نے کہا ہے کہ 25 جنوری سے پہلے اسکول دوبارہ نہیں کھلیں گے ۔ ایک طویل عرصے سے حکومت نے اسکول کھولنے کے معاملےپرتحمل سے کام لیا ہے اوراب بالآخر فیصلہ کیا گیا ہے آسٹریا میں اسکول کب کھلیں گے؟۔ والدین اور طلباء ہفتوں سے پوچھ رہے ہیں بلکہ شاید پورا ملک بدھ 13 جنوری کو اسکول کھلنے کے اعلان کا منتظر تھا مگر اسکول 25 جنوری کو دوبارہ کھلیں گے۔اس تاریخ کے بعد سے اسکولوں میں ایک بار پھر درس وتدریس کا سلسلہ شروع ہوگا۔ تاہم صرف کلاسوں کی شفٹوں میں اور اضافی کورونا احتیاطی تدابیر کے ساتھ جانا ہوگا۔ وزیر تعلیم ہینز فیمن نے بدھ کے روز مقامی میڈیا کے سوال میں کہا کہ اگر کورونا کے انفیکش کی شرح اسی طرح جارہی تو ہم 25 جنوری سے اسکول کھولنا شروع کر سکتے ہیں۔ خزاں کے وقفے کے بعد سے ہائی اسکول کے طلبہ جنہوں نے اپنے نظام الاوقات پر فاصلاتی تعلیم حاصل کی ہے وہ بھی کم از کم 25 جنوری سے شفٹوں میں کلاسوں میں واپس جاسکیں گے۔ویانا اور لوئر آسٹریا کے طلبا کے لئےفاصلاتی تعلیم کی توسیع کا مطلب یہ ہے کہ یکم فروری کو ایک ہفتہ کے سمسٹر کا وقفہ شروع کرنے سے پہلے ان کے سامنے صرف ایک ہفتہ سبق لینے کا وقت ہوتا ہے۔ دیگر وفاقی ریاستوں میں جہاں تعطیلات صرف 8 فروری برگن لینڈ ، کیریینٹیا ، سالزبرگ

، ٹائرول ، وورلبرگ یا 15 فروری نیدراسٹریا ، اپر آسٹریاسے شروع ہوتی ہیں وہاں طلباء کے لئے کلاس روم میں مزید کچھ دن باقی رہ جاتے ہیں۔ وزارت تعلیم کے مطابق طلبہ کو احتیاط کے ساتھ کلاسوں میں واپس جانا چاہئے تاہم ابتدائی اسکولوں کے علاوہ کلاس میں ماسک پہننا لازمی ہے۔ مزید برآں طلباء اور اساتذہ کو ہفتے میں ایک بار کرونا ٹیسٹ کرانا لازمی ہوگا موسم بہار کی طرح طلبا کو دو گروہوں میں تقسیم کیا جاتا ہے اور پھر باری باری اس کو سائٹ پر پڑھایا جاتا ہے۔ ابھی بھی اس کے بارے میں تعلیم کے ڈائریکٹوریٹ کے ساتھ بات چیت کی جارہی ہے اور یہ انفیکشن کی تعداد میں اضافے پر منحصر ہے کہ کورونا حالات کو مدنظر رکھتے ہوئے پلان تبدیل بھی کیا جاسکتا ہے۔دوسری جانب بدھ کے روز بھی کیسوں میںکمی نہیںہوسکی ہے جبکہ آسٹریا میں کورونا ویکسین شروع ہوچکی ہیں اور بنیادی طور پر بوڑھے لوگوں اور نرسنگ ہومز پر زیادہ توجہ مرکوز ہے۔ لاک ڈاؤن کے باوجود کورونا وائرس کے نئے انفیکشن کیسزبہت زیادہ ہیں۔ بدھ کے روز محکمہ صحت حکام نے صرف 24 گھنٹوں کے دوران ملک بھر میں ایک ہزار917 نئے کورونا انفیکشن اور 49 اموات کی اطلاع دی ہے۔ اس سے منگل کے مقابلے میں لگ بھگ 400 معاملات میں انفیکشن کی تعداد میں اضافہ ہوتا ہے۔اور کورونا کے موجودہ حالات کو مدنظر رکھتے ہوئے میڈیا میں قیاس آرائیاں کی جارہی ہیں کہ 21 فروری تک لاک ڈاؤن کا دورانیہ بڑھانا پڑے گا۔

یورپ سے سے مزید