شوکت علی کی موسیقی کا کوئی نعم البدل نہیں : عاطف اسلم
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن

شوکت علی کی موسیقی کا کوئی نعم البدل نہیں : عاطف اسلم

نامور گلوکار عاطف اسلم نے فوک گلوکار شوکت علی کی وفات پر اظہارِ افسوس کرتے ہوئے کہا کہ شوکت علی کی موسیقی کا کوئی نعم البدل نہیں ۔

سوشل میڈیا سائٹ ٹوئٹر پر جاری پیغام میں عاطف اسلم نے کہا کہ شوکت علی صاحب کے انتقال کی خبر نے غمزدہ کردیا ہے۔

انہوں نے کہا کہ لوک موسیقی میں ان کا کردار کبھی نہیں بُھلایا جاسکے کا، ان کی موسیقی کا کوئی نعم البدل نہیں۔

اپنے پیغام کے آخر میں انہوں نے شوکت علی کے اہلِ خانہ سے تعزیت کی اور گلوکار کے بلند درجات کی دعا مانگی۔


واضح رہے کہ معروف لوک گلوکار شوکت علی طویل علالت کے بعد گزشتہ روز لاہور میں انتقال کر گئے، وہ جگر کے عارضے میں مبتلا تھے ۔

شوکت علی نے زندگی کے تقریباً 55 سال فن کی دنیا کو دیے، اس دوران انہوں نے پنجابی لوک گانوں کے علاوہ صوفیانہ کلام بھی گایا جبکہ اردو میں بھی نغمے ریکارڈ کروائے اور ان کے ملی نغمے بھی بہت مقبول ہوئے۔

1965 کی پاکستان انڈیا جنگ کے دنوں میں انہوں نے ایک گانا ریکارڈ کروایا تھا ’جاگ اٹھا ہے سارا وطن، ساتھیو، مجاہدو‘ بہت مقبول ہوا اور آج بھی اکثر سننے کو ملتا ہے۔

شوکت علی کو ان کی فنی خدمات کے صلے میں 1990 میں صدارتی تمغۂ حسن کارکردگی سے نوازا گیا۔

انٹرٹینمنٹ سے مزید