• بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن

قائم علی شاہ کو گرفتار نہیں کرینگے: نیب

سابق وزیرِ اعلیٰ سندھ اور پاکستان پیپلز پارٹی کے بزرگ رہنما قائم علی شاہ کو جعلی اکاؤنٹس اسکینڈل میں اسلام آباد ہائی کورٹ کی جانب سے ریلیف مل گیا، نیب نے گرفتار نہ کرنے کا بیان دے دیا۔

عدالتِ عالیہ کے چیف جسٹس اطہر من اللّٰہ کی سربراہی میں 2 رکنی بینچ نے سماعت کرتے ہوئے اسٹیل مل کی زمینوں کے غبن کے کیس میں قائم علی شاہ کی درخواستِ ضمانت نمٹا دی۔

چیف جسٹس اطہر من اللّٰہ نے سابق وزیرِ اعلیٰ سندھ سے سوال کیا کہ آپ کی عمر اس وقت کتنے برس ہے؟

قائم علی شاہ نے جواب دیا کہ میری عمر اس وقت 85 برس ہے۔

عدالت نے نیب سے سوال کیا کہ قائم علی شاہ کے خلاف کیس کس اسٹیج پر ہے؟

نیب کے پراسیکیوٹر نے جواب دیا کہ کیس میں انویسٹی گیشن جاری ہے لیکن قائم علی شاہ کے وارنٹ نہیں ہیں، ہم نے قائم علی شاہ کو گرفتار نہیں کرنا۔

عدالت نے نیب کے بیان پر قائم علی شاہ کی درخواست نمٹا دی۔

قائم علی شاہ نے جعلی اکاؤنٹس اسکینڈ ل میں تیسری بار درخواستِ ضمانت دائر کی تھی۔

نیب کی جانب سے تینوں بار گرفتار نہ کرنے کی یقین دہانی کرائی گئی۔

قومی خبریں سے مزید