• بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن

اختیاری مضامین میں فیل طلبہ کو پاسنگ مارکس دینے کا فیصلہ

محکمہ تعلیم سندھ نے اختیاری مضامین میں فیل ہونے والے طلبہ کو پاسنگ مارکس دینے کا فیصلہ کرلیا جبکہ پہلی سے آٹھویں تک کے امتحانات اس سال اسکولز میں ہوں گے۔

وزیر تعلیم سعید غنی کی زیر صدارت محکمہ تعلیم کی اسٹیئرنگ کمیٹی کا اجلاس ہوا جس میں سیکرٹری تعلیم، سیکرٹری کالجز، سیکرٹری یونیورسٹیز، سمیت دیگر حکام شریک ہوئے۔

اجلاس میں کلاس نہم اور گیارہویں کے امتحانات کی تاریخ پر تبادلہ خیال کیا گیا اور یہ فیصلہ کیا گیا کہ جولائی میں دسویں کے امتحانات کے فوری بعد نویں کے امتحانات لیئے جائیں گے جبکہ فرسٹ ایئر کے امتحانات بارہویں جماعت کے امتحانات کے  فوری بعد اگست میں لئے جائیں گے۔

اجلاس میں صرف اختیاری مضامین کے امتحانات لینے کا فیصلہ کیا گیا، امتحانات کے45 روز کے بعد نتائج کا اعلان کیا جائے گا۔

اسٹیئرنگ کمیٹی نے طلبہ کے پریکٹیکل امتحانات لینے کا بھی فیصلہ کیا ہے۔

اجلاس میں فیصلہ کیا گیا کہ میٹرک اور انٹر میں پریکٹیکل کے امتحانات تھیوری امتحانات کے بعد ہونگے، پریکٹیکل امتحانات اپنے اپنے اسکولز اور کالجز میں ہی ہوں گے۔

فیصلہ کیا گیا کہ اختیاری مضامین میں فیل ہونے کی صورت میں پاسنگ مارکس دئیے جائیں گےجبکہ لازمی مضامین کے مارکس اختیاری مضامین کے مارکس کی بنیاد پر دیے جائیں گے۔

پہلی سے آٹھویں تک کے امتحانات اسکولز میں اس سال ہوں گےجس کا فیصلہ اسکول خود کرے گا۔

قومی خبریں سے مزید