| |
Home Page
بدھ 28 ذوالحج 1438ھ 20 ستمبر 2017ء
ڈاکٹر منظوراعجاز
September 20, 2017
مولا جٹ ،پاکستان اور امریکہ

آج کل جب بھی امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ یا شمالی کوریا کے سپریم لیڈر کم جنگ اون کا بیان آتا ہے تو پنجابی کی مشہور فلم ’مولا جٹ‘ یاد آجاتی ہے۔ بظاہر مولا جٹ فلم تشدد اور شور ہنگامے سے بھر پور ہے لیکن اس پوری فلم میں باقاعدہ لڑائی کے بہت ہی کم سین ہیں۔ لیکن دوسری طرف فلم کا ہر ڈائیلاگ متشدد الفاظ سے بھرا پڑا ہے۔ فلم کا ہیرو مولا جٹ اور...
September 06, 2017
اخلاقی مبلغین اور کاروبار ریاست

اگر آپ سیاست کو اخلاقی معیار پر ناپتے ہیں اور آپ کو زبان و بیان پر بھی قدرت حاصل ہے تو آپ بلاشبہ مقبولیت کی سیڑھیاں تیزی سے طے کر سکتے ہیں۔کون ہے جو کاروبار ریاست میں شفافیت کا خواہاں نہ ہو۔ لیکن بسا اوقات ایسا بھی ہوتا ہے کہ اخلاقی مبلغین مخصوص اداروں کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے ریاست کی طاقتور ترین اکائیوں کے آلہ کار بن جاتے...
August 30, 2017
صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی افغان پالیسی اور پاکستان

صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے افغانستان اور جنوبی ایشیا میں نئی امریکی حکمت عملی کا اعلان کرتے ہوئے پاکستان کو دھمکی آمیز بیان میں متنبہ کیا ہے کہ وہ طالبان کو اپنے ملک میں محفوظ پناہ گاہیں فراہم نہ کرے۔ پہلے بھی امریکہ سے اسی نوع کے بیانات جاری ہوتے رہے ہیں لیکن یہ درمیانی سطح کے افسران کی طرف سے آتے تھے۔ یہ پہلی مرتبہ ہے کہ کسی امریکی صدر...
August 23, 2017
کیا نواز شریف پنجابی قوم پرست ہیں؟

معطلی کے بعد سابق وزیر اعظم نواز شریف کا جی ٹی روڈ کا شو کافی حد تک موثر تھا۔ ان کے جی ٹی روڈ پر ہونے والے اجتماعات اور مظاہروں سے یہ نتیجہ نکالنا غلط نہیں ہو گا کہ وہ اس علاقے میں اب بھی کافی مقبول ہیں اور اعلیٰ عدلیہ کے فیصلوں سے ان کی مقبولیت بالکل ختم نہیں ہوئی۔ وہ ابھی تک کسی دوسرے علاقے میں نہیں گئے لہٰذا یہ فیصلہ قبل از وقت ہو...
August 16, 2017
نواز شریف:کہانی ختم نہیں ہوئی

سابقہ وزیر اعظم نے اپنی معطلی کے بعد جی ٹی روڈ سے جو واپسی کا سفر کیا اس کی کامیابی یا ناکامی کے بارے میں متضاد دعوے کئے جا رہے ہیں۔ اسی طرح کے متضاد دعوے ان کے مستقبل کے بارے میں بھی ہو رہے ہیں۔ان کے مخالفین کو یقین ہے کہ اب وہ کبھی نہ واپس آنے کے لئے جا چکے ہیں جبکہ ان کے حامی سمجھتے ہیں کہ وہ چوتھی بار وزیر اعظم کی گدی پر براجمان...
August 09, 2017
کیا مشرف بیانیہ صریحاً غلط ہے؟

جنرل پرویز مشرف کا یہ دعویٰ کہ فوجی ڈکٹیٹر ملکی نظام کو درست کرتے ہیں اور سویلین خراب کرتے ہیں معاشی ترقی کی رفتار کی حد تک درست ہو سکتا ہے لیکن معاشرے کے ارتقا کا یہ محض ایک پہلو ہے۔ مجموعی طور پر متوازن معاشرتی ترقی (صرف معاشی نہیں) کے لئے جمہوری نظام نسبتاً بہتر ثابت ہوئے ہیں۔عالمی سطح پر معاشی ترقی تو جمہوری معاشروں میں بھی ہوئی...
August 02, 2017
سیاسی کشمکش کے پس پردہ محرکات

پاکستان اور بالخصوص پنجاب میں حکمراں طبقے کی اکثریت1985 کی مجلس شوریٰ یا اس کی باقیات پر مشتمل ہے۔ ذوالفقار علی بھٹو کی زیر قیادت پیپلز پارٹی نے ایک نئے منصفانہ اور روشن خیال پاکستان کا تصور عوام کو دیا تھا۔ قطع نظر بھٹو شہید کی ذاتی شخصیت کے ملک کے مزدوروں،کسانوںاورروشن خیال درمیانے طبقوں کو نئے دور کی ممکنہ آمد کا دلی یقین...
July 26, 2017
ا سٹاک مارکیٹ کو کیا حکومت کس کی ہے

سپریم کورٹ میں سماعتوں کے دوران یہ تاثر گہرا ہوتا گیا کہ وزیر اعظم نواز شریف کی حکومت غیر مستحکم ہے۔ پہلے جے آئی ٹی اور پھر سپریم کورٹ کی کارروائی کے دوران جب موجودہ حکومت مصائب میں گھری نظر آئی تو اسٹاک مارکیٹ میں چند دن مندی کا رجحان رہا۔ اب جبکہ ملک میں جمہوری حکومت کا مستقبل ہر طرف سے مخدوش نظر آرہا ہے تو اسٹاک مارکیٹ مستحکم...
July 19, 2017
ایک اور دریا کا سامنا

تاریخ جاری و ساری عمل کا نام ہے اور ہر لمحے پرمنیر نیازی کا مصرع ’’ایک اور دریا کا سامنا تھا منیر مجھ کو‘‘ صادق آتا ہے۔ اب جبکہ میڈیا کی بڑی بڑی ہستیاں وزیر اعظم نواز شریف کی حکومت کے کفن دفن کا اعلان کر چکی ہیں تو سوال پیدا ہوتا ہے کہ کیا یہ ایک خاندان کی حکمرانی کے خاتمے کا مظہر ہے یا پھر ایک پورا عہد ماضی کا قصہ بننے جا رہا ہے۔...
July 12, 2017
کیا سارا قصور جنرل ضیاءالحق کا تھا؟

پاکستان کے روشن خیال حلقوں کو یہ یقین واثق ہے کہ 5جولائی 1977کی رات جمہوریت پر شب خون مار کر جنرل ضیا الحق نے جس تاریک دور کا آغاز کیا تھا آج کا پاکستان اسی کا ایک عکس ہے۔ بلا شبہ جنرل ضیاء الحق نے انتہائی تنگ نظر مذہبی نظریہ عوام پر ٹھونسا، ملک کے مقبول ترین وزیر اعظم ذوالفقار علی بھٹو کو پھانسی دی ، لاکھوں بے گناہوں کو قید و بند کیا...
July 05, 2017
نئے دور کا آغاز؟

پاکستان میں میڈیا مبصرین اور سیاسی پنڈتوں کی آرا کو دیکھا جائے تو یہ تاثر ملتا ہے کہ وزیر اعظم نواز شریف کا جانا ٹھہر گیا ہے ۔ ان کی طویل عرصے کی حکمرانی کے خاتمے کے بارے میں بہت سے مبصرین خوش ہیں : ان کے خیال میں نواز شریف اور مسلم لیگ (ن) کا زوال ایک بد عنوانی سے عبارت عہد کا خاتمہ ہے۔ گویا کہ اب پاکستان کی ریاست اور اس کے ادارے اس...
June 21, 2017
کٹھ پتلیوں کا تماشا

صوفیاء، مفکرین اور تاریخ دان اپنے اپنے انداز میں کہتے آئے ہیں کہ انسانی اعمال و افعال کسی بڑے نظام کی لامنتہا طاقتوں کا اظہار ہوتے ہیں۔ یعنی انسان کی اپنی شعوری حرکات و سکنات اس کے بس سے باہر ہوتی ہیں۔کارل مارکس جیسے مفکر اپنے مادی جدلیا ت کے نظریے کے تحت یہ ثابت کرنے کی کوشش کرتے ہیں کہ کسی عہد کے مادی حالات اس زمانے کے انسانوں کی...
June 14, 2017
پاکستان:لا علاج غربت

پچھلے دنوں ایک سروے سامنے آیا جس میں بتایا گیا تھا کہ پاکستان کے شہروں میں غریب اور امیر کے فرق میں بہت زیادہ اضافہ ہوا ہے۔ اسی سروے کے مطابق دیہی علاقوں میں غریب اور امیر کا فرق شہروں سے کم ہے لیکن ملک کی زیادہ تر آبادی دیہات میں رہتی ہے۔ یہ سروے معاشی ماہرین کی توقع کے عین مطابق ہے کیونکہ دیہات میں رہنے والی آبادی کا انحصار...
June 07, 2017
پاکستان میں اداروں کی باہمی کشمکش

ڈان لیکس کا معاملہ ہو یا پاناما لیکس کا، ہر ڈرامے میں کرداربے یقینی کا شکار نظر آتے ہیں۔ ہر وقت ایک بحرانی کیفیت طاری رہتی ہے جس میں ہر ادارہ اپنے دائرہ اختیار کے بارے میں نہ صرف یہ کہ حساس نظر آتا ہے بلکہ اپنی حدود کو و سیع تر کرنے کی کوشش کرتا رہتا ہے۔ ویسے تو ہر ملک کے بارے میں یہ بات کہی جا سکتی ہے کہ اس کے ادارے باہمی کشمکش میں...