Advertisement

’پلمونری فائبروسس‘ پھیپھڑوں کوخراب کرنے والی بیماری

September 19, 2019
 

ہرسال دنیا بھر میں ستمبر کامہینہ پلمونری فائبروسس یعنی پھیپھڑوں کی بیماریوں (پھیپھڑوںپر پڑنے والے نشانات ، دھبوں اور خرابیوں ) کی آگہی کے طور پر منایا جاتاہے ، تاکہ دنیا بھر میں اس بیماری سے متاثرہ افراد سے اظہار یکجہتی ا ور ان کی مدد کیلئے اقدامات کیے جاسکیں۔ پلمونری فائبروسس کے بارے میں شعور اُجاگر کرنے کیلئے سوشل میڈیا کا بہت زیادہ سہارا لیا جاتا ہے۔ آپ بھی اس سلسلے میں سوشل میڈیا چینلز پر اپنا کردار ادا کرسکتے ہیں۔

پلمونری فائبروسس کیا ہے؟

پلمونری فائبروسس پھیپھڑوں کی بیماری ہے جو اس وقت ہوتی ہے جب پھیپھڑوں کے ٹشوز خراب ہوجاتے ہیں اوراس پر داغ پڑجاتے ہیں۔ ٹشوز جب گاڑھے یا سخت ہوجاتے ہیں تو پھیپھڑوں کو اپنا کام کرنے میںمشکل پیش آتی ہےاور جیسے جیسےپلمونری فائبروسس کا مسئلہ بڑھتا جاتاہے، مریضکو سانس لینے میں دقت ہونے لگتی ہے۔ پلمونری فائبروسس میں پھیپھڑوں پر پڑنے والے داغ کے پیچھے بہت سے عوامل ہوسکتے ہیں،تاہم زیادہ تر معاملات میں ڈاکٹر اس بات کی نشاندہی نہیں کرسکتے ہیں کہ مسئلہ کی اصل وجہ کیا ہے اورجب کوئی وجہ ڈھونڈی نہ جاسکے تو اس حالت کو آئیڈیو پیتھک پلمونری فائبروسس کہا جاتا ہے۔ پلمونری فائبروسس کی وجہ سے پھیپھڑوں کو ہونے والے نقصان کا ازالہ نہیں ہوسکتا لیکن ادویات، علاج اور علامات کو کم کرنےوالی احتیاطی تدابیر سے معیار زندگی کو بہتر بنانے میں مدد مل سکتی ہے۔ اگر یہ بیماری بہت شدید ہوجائے تو کچھ لوگوں کیلئے پھیپھڑوں کا ٹرانسپلانٹ کروانا مناسب رہتا ہے۔

علامات

پلمونری فائبروسس کی علامات درج ذیل ہوسکتی ہیں:

٭سانس لینے میں دشواری (dyspnea)

٭خشک کھانسی

٭تھکاوٹ

٭وزن میں کمی،لیکن وجہ معلوم نہ ہو

٭پٹھوں اور جوڑوں میںاینٹھن

٭ہاتھوںاور پیروں کی انگلیوں کی پوریں چوڑی اور گول ہو جانا

پلمونری فائبروسس کی علامات اور شدت ایک شخص سے دوسرے شخص میں کافی حد تک مختلف ہو سکتی ہیں۔ کچھ لوگ اس بیماری سے بہت جلد متاثر ہوجاتے ہیں جبکہ کچھ لوگوںکو اس مرض میں مبتلا ہونے میںمہینوں یا برسوں لگ جاتے ہیں۔ کچھ لوگوں کو اس مرض میں سانس لینے میںبہت مشکل پیش آتی ہے جو کئی دن سے ہفتوں تک جاری رہ سکتی ہےاور ایسے لوگوںکو وینٹیلیٹر پر رکھا جاسکتا ہے۔ اس بیماری کے علاج کیلئے ڈاکٹرزاینٹی بائیوٹکس ، کورٹیکوسٹرائڈ (Corticosteroid)دوائیں یا دیگر ادویات بھی دے سکتے ہیں۔

اسباب اور وجوہات

پلمونری فائبروسس پھیپھڑوں میں ہوا کے تھیلے (alveoli) کے آس پاس اور اس کے درمیان ٹشوز کو داغدار اور گاڑھا کرتا ہے۔ اس سے خون کے بہاؤ میں آکسیجن کا گزرنا مزید مشکل ہوجاتا ہے۔ یہ نقصان بہت سارے مختلف عوامل کی وجہ سے ہوسکتا ہے، جس میں بعض زہریلے مادوں کا طویل عرصے تک استعمال، کچھ طبی حالات، ریڈیالوجی طریقہ علاج یا دوائوں کے مضر اثرات شامل ہیں۔اس کے علاوہ بہت سے کارخانوں یافیکٹریوںمیںکام کرنے والے بھی اس بیماری سے متاثر ہو سکتے ہیں، خاص طور پر جہاں لوگ سلیکا والی دھول مٹی، فائبرکے چھننے سے اڑنے والے ذرات، دھاتوں کی دھول مٹی، کوئلے کے اڑنے والے ذرات، اجناس کے گردوغبار، جانوروں اور پرندوںکے فضلے والے ماحول میں کام کرتے ہیں۔ محققین کے مطابق یہ مرض تمباکو نوشی سے بھی ہوسکتاہےاور اس کی وجہ موروثی بھی ہوسکتی ہے۔

آئیڈیوپیتھک پلمونری فائبروسس میں مبتلا بہت سے لوگوں میں معدے کی تیزابیت والی بیماری (GERD ) بھی ہوسکتی ہے۔ ایسی حالت اس وقت ہوتی ہے جب آپ کے پیٹ سے تیزاب آپ کی غذائی نالی میں واپس جاتا ہے۔ ایک جاری تحقیق میںاس بات کا جائزہ لیا جارہا ہے کہGERD پلمونری فائبروسس کے لئے خطرہ کا عنصر ہوسکتا ہے یا یہ اس حالت میں تیزی سے بگاڑ پیدا کرسکتا ہے۔ تاہم آئیڈیوپیتھک پلمونری فائبروسس اور GERD کے مابین وابستگی کا تعین کرنے کے لئے مزید تحقیق کی ضرورت ہے۔

متاثر کرنے والے عوامل

وہ عوامل جو آپ کو پلمونری فائبروسس کیلئےزیادہ حساس بناتے ہیں، ان میں شامل ہیں:

عمر: اگرچہ پلمونری فائبروسس کی تشخیص بچوں اور نوزائیدہ بچوں میں کی گئی ہے، لیکن اس عارضے سے درمیانی عمر اور ضعیف العمر لوگوں کے متاثر ہونے کا زیادہ امکان ہوتا ہے۔

صنف: آئیڈیویپیتھک پلمونری فائبروسس کے ہونے کا امکان مردوں کے مقابلے میں خواتین کوزیادہ ہوتا ہے۔

سگریٹ نوشی: تمباکو نوشی کرنے والوں یاایسے افراد جو تمباکو نوشی ترک کرچکے ہوں ان میںپلمونری فائبروسس کے ہونے کا امکان زیادہ ہوتا ہے۔ ایمفیسیما(Emphysema) کے مریضوں کو پلمونری فائبروسس ہوسکتا ہے۔

پیشہ: کان کنی ، کاشتکاری یا تعمیرات کے شعبے میں کام کرنے والے افراد یاجنہیں پھیپھڑوں کو نقصان پہنچانے والی آلودگیوں کا سامنا کرنا پڑتا ہے، ان میں پلمونری فائبروسس ہونے کا خطرہ زیادہ ہوتا ہے۔

کینسر کا علاج: اپنے سینے پر ریڈیو ایکٹو علاج کروانا یا کیموتھراپی دوائیں استعمال کرنا پلمونری فائبروسس کے خطرے کو بڑھاسکتا ہے۔

جینیاتی عوامل: بعض اقسام کے پلمونری فائبروسس موروثی ہوتے ہیں اور جینیاتی عوامل اس کا جز وہوسکتے ہیں۔


مکمل خبر پڑھیں