• بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن

استحصالی پالیسیوں کیخلاف عوام سردار اختر مینگل کا ساتھ دیں‘بی این پی

کوئٹہ (آن لائن )بی این پی کوتنظیمی طورپرمنظم اورفعال ومتحرک بنانے کی صورت میں ہی قومی حقوق کاتحفظ یقینی بنایاجاسکتاہے بلوچ قوم اور بلوچستان کو سیاسی ،معاشی اور معاشرتی بحران سے نکالنے کیلئے ضروری ہے کہ یہاں کے عوام سرداراخترمینگل کی قیادت میں متحدہوکر شعوری وفکری جدوجہد کی طرف راغب ہوکر استحصالی وناانصافی پر مبنی پالیسیوں کے خلاف سیسہ پلائی دیوار بن کر قومی وشعوری جدوجہد کو تقویت دیں ۔ان خیالات کااظہار بلوچستان نیشنل پارٹی کے مرکزی ہیومن رائٹس سیکرٹری موسیٰ بلوچ ،مرکزی کمیٹی کے ممبر وضلعی آرگنائزرغلام نبی مری ،مرکزی کمیٹی کے ممبر وضلعی ڈپٹی آرگنائزر میر جمال لانگو، ضلعی آرگنائزنگ کمیٹی کے ارکان ملک محی الدین لہڑی ،محمدلقمان کاکڑ،طاہر شاہوانی ایڈووکیٹ، ڈاکٹرعلی احمد قمبرانی ،ماما نصیرمینگل ،اسماعیل کرد،ستار شکاری ،نسیم جاوید ہزارہ ،رضا جان شاہی زئی ،شاہ خالد مینگل ،سلیم چند، ڈاکٹر عباس لاشاری ،سلیم ریکی ،حاجی محمداسماعیل لانگو،پروفیسر فاروق رئیسانی،ملک محمد حسن مینگل ، طارق بابئی ،میر شیر احمد بنگلزئی ،ملک عبدالکریم مینگل ،عزیز الرحمٰن سارنگزئی ،محمدنور خان کیازئی ،نیاز محمدحسنی،نعمت مظہر ہزارہ،حاجی محمدعالم مینگل ،راشد علی کیازئی ،ماما عبدالودود مینگل ،حاجی عبدالکریم لانگو،کیپٹن عبدالرئوف کیازئی، ابدالی کاکڑ اور کامریڈ عبدالحمید لانگو نے بی این پی ضلع کوئٹہ کے زیراہتمام جاری تنظیم سازی مہم کے سلسلے میں کلی کاسیان بلیلی ،کلی عبدالصمد کاکڑہنہ اوڑک، بستی شانتی نگر اخترمحمدروڈ،ممتاز ٹائون کلی جیو ،خلق آلہ آباد کیازئی مغربی بائی پاس،سارنگ زئی اسٹریٹ مشرقی بائی ،مینگل کالونی مشرقی بائی پاس، پروفیسر محمدخان رئیسانی مرحوم اسٹریٹ بروری روڈ، سید محمدشاہ ٹائون قمبرانی روڈ،کلی کمالوسریاب روڈ، مینگل آباد سبی روڈ، امین آباد بروری روڈ، کلی عالمو ،کلی جمعہ خان جناح ٹائون اور بینک کالونی قمبرانی روڈ میں نئے یونٹوں کے قیام کے سلسلے میں کارنرمیٹنگز ،عوامی اجتماعات اوریونٹ باڈیز سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ انہوں نے کہاکہ کوئٹہ کے باشعور قوم وطن دوست ترقی پسند ،روشن خیال عوام اور سیاسی کارکن وقت اور حالات کی نزاکت کوسمجھتے ہوئے بی این پی جوکہ یہاں کی تمام اقوام ،مکاتب فکراور کچلے ہوئے طبقات کے حقوق کی نجات دہندہ جماعت ہے اس کوہر دلعزیز اورفعال ومتحرک بنانے میں اپنا بھرپورکرداراداکریں ،بی این پی کے فعال ومضبوط تنظیمی ڈھانچے کی شکل ہی میں ہم استحصالی اور غیر جمہوری ونادہندہ قوتوں کے ان عزائم وتوسیع پسندانہ پالیسیوں کوناکام بناسکتے ہیں جنہوں نے گزشتہ کئی عشروں سے بلوچ قوم اور بلوچستانی عوام کے ساتھ رواکھا۔ انہوں نے ہوشاپ میں ہونے والے نہتے معصوم بچوں کے بہیمانہ قتل اور بلوچستان یونیورسٹی کے مین گیٹ کے قریب احتجاج پردھماکے کی مذمت کی ۔آخر میں نئے یونٹوں کے عہدیداروں کے قیام کیلئے الیکشن کمیٹیوں کے ذریعے جمہوری اور سیاسی انداز میں الیکشن کروائے گئےاورنومنتخب عہدیداروں کومبارکباد دی گئی۔
کوئٹہ سے مزید