• بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن

حسن علی نے مین آف دی میچ ایوارڈ سپورٹرز کے نام کردیا


ڈھاکا میں بنگلادیش کے خلاف پہلے ٹی20 میچ کے مین آف دی میچ حسن علی نے ایوارڈ کو ٹی20 ورلڈ کپ میں بھرپور سپورٹ کرنے والے فینز کے نام کیا ہے۔

انہوں نے کہا کہ کرکٹ میں کھلاڑیوں کی کارکردگی میں اتار چڑھاؤ آتے ہیں، ورلڈ کپ میں اُن کی کارکردگی اچھی نہیں رہی۔

حسن علی نے مزید کہا کہ ورلڈ کپ میں کوشش تھی کہ 100فیصد کارکردگی دکھاؤں، وہاں نو بال کا معاملہ بھی رہا، رنز بھی زیادہ دیے اور زیادہ آؤٹ بھی نہ کرسکا۔

پاکستانی فاسٹ بولر نے یہ بھی کہا کہ بنگلادیش اپنے گراؤنڈ پر ایک مضبوط ٹیم بن کر آتی ہے، یہاں پہنچ کر خامیاں دور کرنے کے لیے محنت کی۔

اُن کا کہنا تھا کہ کنڈیشن مشکل تھیں خوشی ہے، مڈل آڈر نے گیمز کامیابی سے اختتام تک پہنچایا، پاکستان ٹیم کا ہر میچ میں مین آف دی میچ ایک الگ کھلاڑی ہوتا ہے جو اچھی بات ہے۔

حسن علی نے کہا کہ الگ الگ مین آف دی میچ سے یہ ثابت ہوتا ہے ٹیم کسی ایک کھلاڑی پر انحصار نہیں کرتی۔

فاسٹ بولر نے بنگلادیش کے خلاف پہلے ٹی20 میچ میں 4 اووز میں22 رنز کے عوض 3 وکٹیں اپنے نام کیں، انہیں عمدہ پرفارمنس پر میچ کا بہترین کھلاڑی قرار دیا گیا۔

کھیلوں کی خبریں سے مزید