• بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن

یارکشائر میں پانچ برس کے دوران 17ہزار سے زائد بچوں کی گرفتاریاں

ا بریڈفورڈ(نمائندہ جنگ )یارکشائر کاؤنٹی بھر میں پولیس نے پچھلے پانچ سالوں میں 17,000 سےزائد مرتبہ بچوں کو گرفتار کیا ہے ،مقامی میڈیا کے مطابق یہ اعداد و شمار ویسٹ یارکشائر پولیس کو معلومات کی آزادی کی درخواست کے ذریعے جاری کیے گئے ہیں، اعداد و شمار، جو یکم دسمبر 2016 سے 30 نومبر 2021 تک کے عرصے پر محیط ہیں ظاہر کرتے ہیں کہ مجموعی طور پر 17,384 گرفتاریاں عمل میں آئیں، جہاں زیر حراست کی عمر 18 سال سے کم تھی وہاں اس میں 10 سال سے کم عمر کے بچے بھی شامل تھے، تقریباً 85 فیصد مقدمات میں گرفتار افراد میں ایک مرد تھا اور کسی شخص کے خلاف تشدد کل بچوں کی گرفتاریوں کا تقریباً ایک تہائی ہے، 47 فیصد معاملات میں مزید کارروائی نہیں کی گئی۔ ویسٹ یارکشائر پولیس نے کہا کہ گرفتاریوں کے حوالے سے افسران کی حوصلہ افزائی کی جاتی ہے کہ وہ بچوں کے مشتبہ افراد کے ساتھ نمٹنے کے دوران حراست کے متبادل ذرائع کو استعمال کریں تاکہ کم عمری سے ہی نوجوانوں کو مجرم بننے کے احساس سے بچایا جا سکے یہ یقینی بناتا ہے کہ ہم نہ صرف جرائم سے نمٹ رہے ہیں بلکہ ہم بچوں کو غلط راستے پر چلنے سے ہٹانے کے لیے کام کر رہے ہیں ،فورس کا کہنا تھا کہ جب کسی نوجوان کو حراست میں لیا جاتا ہے، تو اسے حراست میں لیے جانے کے عرصہ کو ممکنہ طور پر کم سے کم رکھا جاتاہے اور حالیہ برسوں میں اس تعداد میں کمی واقع ہوئی ہے۔