• بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن

آواز سریلی نہ ہونے پر بنگلہ دیشی پولیس نے گلوکار پر پابندی لگادی

تصویر بشکریہ بین الاقوامی میڈیا
تصویر بشکریہ بین الاقوامی میڈیا

بنگلہ دیشی اداکار و گلوکار ہیرو عالم کو آواز سریلی نہ ہونے پر پولیس کی جانب سے ذہنی تشدد اور گانا گانے پر پابندی کا سامنا ہے۔

غیر ملکی میڈیا رپورٹس کے مطابق بنگلہ دیشی پولیس کی جانب سے گلوکار ہیرو عالم کے گانا گانے پر پابندی عائد کی گئی ہے۔

دوسری جانب ہیرو عالم کا پولیس کی جانب سے عائد کی گئی اس پابندی سے متعلق کہنا ہے کہ پولیس نے اُن کا میوزیکل کیریئر ختم کر دیا ہے، پولیس نے اُنہیں ذہنی تشدد کا نشانہ بھی بنایا ہے، اُنہیں کلاسیکل سانگز گانے سے بھی منع کیا گیا ہے۔

ہیرو عالم نے کہا ہے کہ پولیس کا اُن سے متعلق یہ بھی کہنا ہے کہ میں گلوکار بننے کے قابل نہیں ہوں کیوں کہ میں ایک بدصورت انسان ہوں، مجھے گلوکار بننے کے لیے معافی کے بانڈ پر دستخط کرنے چاہئیں۔

ہیرو عالم نے دعویٰ کیا ہے کہ پولیس نے رات مجھے 6 بجے گھر سے اٹھایا اور 8 گھنٹوں تک مسلسل حراست میں رکھا، پولیس کا پوچھنا تھا کہ میں کلاسیکل گانے اور غزلیں کیوں گاتا ہوں۔

واضح رہے کہ بنگلہ دیشی اداکار و گلوکار ہیرو عالم کی سوشل میڈیا پر بھاری بھرکم فین فالوونگ موجود ہے۔

ہیرو عالم کو فیس بُک پر 20 لاکھ صارفین فالو اور یوٹیوب پر 15 لاکھ سے زائد صارفین نے سبسکرائب کیا ہوا ہے۔

دوسری جانب ڈھاکہ کے ایک سرکاری افسر (جاسوس اداراے کے چیف) ہارون الرشید نے صحافیوں کو بتایا کہ عالم نے اپنی ویڈیوز میں بغیر اجازت پولیس کی وردی پہننے اور وردی میں گانا گانے پر معذرت کی ہے۔

ہارون الرشید کا کہنا ہے کہ ہمیں عالم کے خلاف بہت سی شکایات موصول ہوئیں ہیں، عالم نے گانے کا روایتی انداز مکمل طور پر تبدیل کر دیا ہے۔

عالم نے ہمیں یقین دلایا ہے کہ آئندہ وہ پولیس کا یونیفارم نہیں پہنے گا اور گانا نہیں گائے گا۔

انٹرٹینمنٹ سے مزید