• بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن

انسان جن طور طریقوں کے مطابق زندگی گزارتا ہے، اس کا ہماری ذہنی اور جسمانی صحت کے ساتھ گہرا تعلق ہوتا ہے۔ طبی ماہرین کے مطابق، زیادہ وزن کا حامل جسم کئی بیماریوں کو دعوت دیتا ہے۔ کھانے پینے کے شوقین افراد اس بات کا خیال نہیں رکھتے کہ صحت کے لیے کس قسم کی غذا کی ضرورت ہے، جس کے نتیجے میں وہ مختلف نامیاتی بیماریوں کے علاوہ ڈپریشن کا بھی شکار ہوجاتے ہیں۔ موسمی پھل ہر طرح کی غذائیت سے بھرپور ہوتے اور انسان کو ذہنی و جسمانی طور پر ترو تازہ رکھتے ہیں۔

سبز، سرخ اور جامنی رنگوں کے انگور مزیدار اور غذائیت سے بھرپور ہوتے ہیں۔ قدرت کے اس شاہکار پھل میں پوٹاشیم، کاربوہائیڈریٹ، پروٹین، وٹامن اے، وٹامن سی، کیلشیم، آئرن، وٹامن بی6اور میگنیشیم ہوتا ہے۔ انگور کو جنت کا پھل بھی کہا جاتا ہے، جسے باغوں کے علاوہ گھروں میں بیلوں پر بھی اُگایا جاتا ہے۔ ابتدائے زمانہ میں یہ یورپ اور بحیرہ روم کے خطے کا پھل تھا لیکن اب دنیا کے ہر خطے میں اسے اُگایا اور کھایا جاتا ہے۔ انگور کھانے سے آپ کو اپنی صحت کے حوالے سے درج ذیل فوائد حاصل ہوتے ہیں۔

صحت مند دل

انگور اینٹی آکسیڈنٹس سے بھرپور ہوتے ہیں، جو دل کے امراض کے خطرے کو کم کرنے میں مدد دیتے ہیں۔ ان اینٹی آکسیڈنٹس کے ساتھ ساتھ پولی فینولز بھی آتے ہیں، جن کا کا م بھی دل سے وابستہ بیماریوں کو دور کرنا ہوتا ہے۔ بوسٹن یونیورسٹی اسکول آف میڈیسن کے محققین کی ایک تحقیق میں بتایا گیا ہے کہ انگور کے پولی فینول LDL(خراب کولیسٹرول) اور بلڈ پریشر میں کمی لاسکتے ہیں جبکہ دوسرے صحت بخش فوائد کے علاوہ سوزش کو بھی کم کرسکتے ہیں۔ تحقیق سے نتیجہ اخذ کیا گیا ہے کہ انگور سمیت غذائیت سے بھرپور دیگر پھل اور سبزیاں قلبی بیماریوں کے خطرے کو کم کرسکتی ہیں۔

نظام ہاضمہ

انگور میں فائبر ہوتا ہے جو نظام ہاضمہ میں مدد کرتا ہے۔ انگور میں پایا جانے والا فائبر زیادہ تر ناقابل تحلیل ہوتا ہے کیونکہ یہ پیٹ کو صحت مند رکھنے کے لیے آپ کی آنتوں میں منتقل ہوجاتا ہے۔ انگور کا رس ایک اہم جزو ہے، جو صحت مند ہاضمے میں مدد کرتا ہے۔

توانائی سے بھرپور

انگور میں کاربوہائیڈریٹ اور خاص سیلولوز شامل ہوتے ہیں، جو قدرتی توانائی میں اضافہ کرتے ہیں۔ مٹھی بھر انگور کھانے سے آپ کو فوری طور پر توانائی ملے گی۔ انگور میں فائبر کی مقدار زیادہ ہونے کی وجہ سے میٹابولزم کا عمل سست ہو جاتاہے، جس سے آپ کو دیرپا توانائی مل جاتی ہے۔

گردوں کی صحت

انگور میں اینتھوسنین (anthocyanin) کی وجہ سے انگور کا سرخ رنگ جامنی رنگ میں تبدیل ہو جاتا ہے اور اس میں ریسوریٹرول (resveratrol) جیسے طاقتور اینٹی آکسیڈنٹس ہوتے ہیں۔ یہ فاضل مادوں جیسے یورک ایسڈ کو نکالنے کے لئے بھی سخت محنت کرتے ہیں۔ دونوں اینٹی آکسیڈنٹس فری ریڈیکلز سے لڑنے میں کلیدی کردار ادا کرتے ہیں، فری ریڈیکلز گردوں میں انفیکشن اور بیماری کا باعث بن سکتے ہیں۔

کینسر سے بچاؤ

انگور میں موجود طاقتور اینٹی آکسیڈنٹس میں کینسر سے لڑنے کی خصوصیات ہوتی ہیں، جو چھاتی کے کینسر سمیت کینسر کی دیگر اقسام سے محفوظ رکھنے میں مدد کرتے ہیں۔ پولی فینولز جیسے ریسوریٹرول میں اینٹی آکسیڈنٹ کی خصوصیات کے علاوہ سوجن اور جلن کے خلاف اینٹی انفلیمیٹری خصوصیات بھی پائی جاتی ہیں۔ تحقیق سے ثابت ہوا ہے کہ ریسوریٹرول میں بہت سارے فوائد کے ساتھ ساتھ یہ بھی ایک بڑا فائدہ ہے کہ یہ کینسر کے خطرات کم کرنے میں مدد کرتا ہے۔

مضبوط پٹھے

انگور آپ کے پٹھوں کی طاقت اور صلاحیت کو بہتر بناسکتے ہیں۔ جارجیا یونیورسٹی میں چوہوں پر کئے گئے مطالعے سے معلوم ہوا ہے کہ انگورکے چھلکوں میں پائے جانے والے مرکبات (کیٹیچنز، کوئیرسیٹن اور ریسوریٹرول) نے چوہوں میں تھکن، فٹنس اورپٹھوں کے افعال کو بہتر کرنے میں مدد کی۔ اگرچہ انسانوں پر اس قسم کی تحقیق نہیں کی گئی، تاہم انگوروں سے جو توانائی ملتی ہے، اس سے آپ خود کو بہتر محسوس کرتے ہیں۔

جِلد کیلئے بہترین

انگور میں موجود اجزاء، عمر میں اضافے کی وجہ سے ہونے والی علامات اور جِلد سے متعلق مسائل کو کم کرنے میں مدد کرتے ہیں۔ کیلیفورنیا یونیورسٹی میں کی گئی ایک تحقیق کے مطابق انگو ر میں موجود ریسوریٹرول (resveratrol) کیل مہاسوں کی وجہ بننے والے جراثیم کے خلاف مزاحمت کرتا ہے۔

آنکھوں کیلئے مفید

میامی یونیورسٹی کی ایک تحقیق سے پتہ چلا ہے کہ انگور کھانے سے آنکھیں صحت مند رہتی ہیں۔ تحقیق میں یہ بات سامنے آئی ہے کہ انگور کھانے سے آنکھوں کے قرنیے میں نقصان دہ مالیکیولز کے اخراج کا خطرہ کم ہوتاہے۔ یہ پھل ڈی این اے کو نقصان سے محفوظ رکھنے میں مدد کرتے ہوئے صحت مند خلیوں کو تحفظ فراہم کرتا ہے، جس سے بصارت کو فائدہ ہوتا ہے۔

سانس لینے میں آسانی

مطالعوں سے یہ بات سامنے آئی ہے کہ آپ پھل اور سبزیاں جتنی کم کھائیں گے، اتناہی آپ کو استھما یا سانس کی بیماریوں کا مسئلہ درپیش آسکتا ہے۔ انگور کھانے سے دمہ کی تکلیف کم ہوسکتی ہے۔ جریدے، نیوٹرینٹ میں شائع ہونے والے نتائج سے پتہ چلا ہے کہ پھل اور سبزیاں دمہ کی روک تھام اور علاج دونوں میں اہم کردار ادا کرتی ہیں۔