• بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن

پاکستان کا بھارت کیلئے فضائی حدود پھر بند کرنے پر غور

کراچی (اسٹاف رپورٹر) پاک بھارت کشیدگی کے پیش نظر پاکستان نے ایک بار پھر اپنی فضائی حدود کو بھارتی فضائی کمپنیوں کے لیے بند کرنے پر غور کرنا شروع کردیا ہے ۔ فضائی حدود کھلنے کے باجود خود پاکستان اور بھارت کے درمیان براہ راست فضائی رابطہ نہیں ہے ،ترجمان قومی ایئر لائن کے مطابق بھارت کے لیے پروازیں چلانے کا کوئی فائدہ نہیں۔ ذرائع کے مطابق بھارتی اقدام کے بعد سرحدوں پر سخت کشیدگی ہے اور اس صورتحال میں بھارتی فضائیہ کسی بھی وقت پاکستانی حدود کی خلاف ورزی کرسکتی ہے جس کی نشاندہی کے لیے پاکستان کی فضائی حدود بھارت سے آنے والے طیاروں کے لیے بند کرنے کی تجویز زیر غور ہے ۔ واضح رہے کہ پلوامہ کے واقعے کے بعد بھارتی فضائیہ نے پاکستانی حدود کی خلاف ورزی کی تھی اور پاکستانی علاقے میں بمباری کی تھی جس کے بعد 27 فروری کو پاکستانی فضائی حدود کو بھارت سے آنے والے اور بھارت جانے والے طیاروں کے لیے بند کردیا گیا تھا تاہم فضائی حدود کو دوبارہ سے 15 جولائی کو کھول دیا گیا تھا ۔ پاکستانی فضائی حدود کی بندش سے بھارتی فضائی کمپنیوں کو 16 ارب روپے سے زاید کا نقصان ا ٹھانا پڑا۔فضائی حدود کھولے جانے کے بعد بھارتی فضائی کمپنیوں کی 340 پروازیں روز انہ پاکستانی فضائی حدود سے گزر رہی ہیں۔
اہم خبریں سے مزید