آپ آف لائن ہیں
پیر12؍شعبان المعظم 1441ھ 6؍اپریل 2020ء
Namaz Timing
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیئرمین و ایگزیکٹوایڈیٹر: میر جاوید رحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن
تازہ ترین
آج کا اخبار
کالمز

شام کا معاملہ، روس سے معاہدے کی خلاف ورزی نہیں کی، ترکی

ترکی نے شام میں روس کے ساتھ  معاہدے کی خلاف ورزی کی تردید کی ہے۔ ترکی نے ہفتہ کے روز روسی الزامات کو مسترد کرتے ہوئے کہا کہ اس نے شام کے صوبہ ادلیب میں روس اور ایران کے ساتھ عدم استحکام کے معاہدوں کی خلاف ورزی کی ہے، اور ماسکو کے ساتھ سفارتی کوششیں ناکام ہونے پر اس علاقے میں فوجی کارروائی کرنے کی دھمکی دی ہے۔

15 فروری 2020 کو جرمنی کے شہر میونخ میں میونخ سیکیورٹی کانفرنس کے دوران ترک وزیر خارجہ میلوت کاووسلو نے اپنے روسی ہم منصب سرگئی لاوروف سے ملاقات کی۔

ترکی نے ہفتہ کے روز روسی الزامات کو مسترد کردیا کہ اس نے شام کے صوبہ ادلیب میں روس اور ایران کے ساتھ عدم استحکام کے معاہدوں کی خلاف ورزی کی ہے، اور ماسکو کے ساتھ سفارتی کوششیں ناکام ہونے پر اس علاقے میں فوجی کارروائی کرنے کی دھمکی دی ہے۔

ترکی اور روس، جو شام کی جنگ میں فریقین کی حمایت کرتے ہیں، نے سن 2018 میں شمال مغربی صوبے میں جنگ سے محفوظ زون کے قیام پر اتفاق کیا تھا۔ لیکن ان کا نازک تعاون ادلب میں شامی حکومت کی کارروائی سے متاثر ہوا ہے، جس میں پچھلے دو ہفتوں میں 13 ترک فوجی ہلاک ہوگئے ہیں۔

انقرہ نے کہا ہے کہ وہ  شام کی افواج کو پیچھے ہٹانے کے لئے فوجی طاقت کا استعمال کریگا ، اور صدر طیب اردگان نے کہا ہے کہ اگر ترکی کے کسی دوسرے فوجی کو نقصان پہنچتا ہے تو ترکی، شام میں کہیں بھی سرکاری فوج پر حملہ کرے گا۔

اردگان نے بدھ کے روز روسی صدر ولادیمیر پوتن اور ہفتہ کے روز امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے ساتھ علیحدہ علیحدہ فون پر گفتگو اور صورتحال پر تبادلہ خیال کیا ، لیکن سفارتی پیشرفت کا فوری طور پر کوئی لفظ سامنے نہیں آیا۔

بین الاقوامی خبریں سے مزید