• بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن

کراچی: پتنگ کی ڈور سے بچہ جان بحق، مقدمہ درج

 پتنگ اڑانے والے 2 ملزمان کو گرفتار  کر لیا گیا ہے


کراچی کے علاقے ناظم آباد میں پتنگ کی ڈور سے 4 سال کے بچے کے جاں بحق ہونے کے واقعے کا مقدمہ بچے کے والد کی مدعیت میں گلبہار تھانے میں درج کر لیا گیا ہے۔

پولیس کے مطابق مقدمے میں قتل کی دفعہ لگائی گئی ہے، قاتل پتنگ اڑانے والے 2 ملزم باپ اور بیٹا گرفتار ہیں۔

واضح رہے کہ شہرِ قائد کے علاقے ناظم آباد میں پتنگ کی ڈور سے ایک اور ننھے بچے کی جان چلی گئی تھی، معصوم پھول کی جان بچ سکتی تھی اگر پولیس اسپتال وقت پر پہنچ جاتی۔

پولیس کے مطابق کراچی کے علاقے ناظم آباد 2 نمبر کے قریب 2 سالہ سفیان اپنے والدین کے ساتھ موٹر سائیکل پر جا رہا تھا کہ گلے میں پتنگ کی ڈور پھرنے سے زخمی ہو گیا۔

بچے کو فوری طور پر عباسی شہید اسپتال منتقل کیا گیا تاہم وہ زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے خون زیادہ بہہ جانے کے سبب دم توڑ گیا۔

ننھے سفیان کے والد بھی بازو پر ڈور پھرنے سے معمولی زخمی ہوئے ہیں۔

بچے کے والدین کا کہنا ہے کہ عباسی شہید اسپتال میں گھنٹوں تک پولیس کی کارروائی کا انتظار کرتے رہے لیکن پولیس حادثے کے 2 گھنٹے بعد اسپتال پہنچی اور قانونی کارروائی کی۔

یہ بھی پڑھیئے: بنارس پل پر پتنگ کی ڈور سے بچہ جاں بحق ہوگیا

ننھے سفیان کے والدین کا کہنا تھا کہ رمضان کے بعد بیٹے کا اسکول میں داخلہ کرانا تھا، بچے کے گلے پر ڈور پھری تو دوپٹے سے خون روکنے کی کوشش کی اور اسپتال منتقل کرنے تک سفیان کی سانسیں چل رہی تھیں، پولیس کی عدم موجودگی کی وجہ سے اسپتال نے طبی امداد فراہم نہیں کی۔

دوسری جانب گلبہار پولیس نے کارروائی کرتے ہوئے پتنگ اڑانے والے 2 ملزمان کو گرفتار کر لیا ہے، گرفتار ملزمان باپ بیٹا ہیں۔

واضح رہے کہ اس سے قبل بھی پتنگ کی ڈور پھرنے سے کراچی کے علاقوں لیاقت آباد، اورنگی ٹاؤن اور ناظم آباد کے اطراف میں کئی بچے زندگی کی بازی ہار چکے ہیں اور پولیس ان واقعات کی روک تھام میں مکمل ناکام دکھائی دیتی ہے۔

قومی خبریں سے مزید