آپ آف لائن ہیں
منگل9؍ربیع الاوّل 1442ھ 27؍اکتوبر 2020ء
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیئرمین و ایگزیکٹوایڈیٹر: میر جاوید رحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن
Jang Group

فیصل واوڈا نااہلی کیس، سماعت 8 اکتوبر تک ملتوی


الیکشن کمیشن آف پاکستان نے پاکستان تحریکِ انصاف کے رہنما فیصل واوڈا کی نااہلی کے کیس کی سماعت 8 اکتوبر تک ملتوی کر دی۔

الیکشن کمیشن آف پاکستان میں جسٹس الطاف ابراہیم قریشی کی سربراہی میں 3 رکنی بینچ نے کیس کی سماعت کی۔

دورانِ سماعت درخواست گزار کے وکیل نے دلائل دیتے ہوئے کہا کہ فیصل واوڈا نے ریٹرننگ افسر کو دیئے گئے بیانِ حلفی میں جھوٹ بولا، انہوں نے دہری شہریت منسوخی کا ثبوت بھی نہیں دیا۔

فیصل واوڈا کے وکیل نے جوابی دلائل میں کہا کہ آرٹیکل 225 کے تحت انتخابی معاملہ صرف الیکشن پٹیشن کے ذریعے اٹھایا جا سکتا ہے، درخواست گزاروں کو الیکشن ٹریبونل میں جانا چاہیے تھا۔

انہوں نے مزید کہا کہ یہ ریفرنس اسپیکر قومی اسمبلی کو بھجوانا چاہیے تھا، متعدد عدالتی فیصلوں کے مطابق الیکشن کمیشن ایگزیکٹو ادارہ ہے، عدالت نہیں۔

الیکشن کمیشن پنجاب کے ممبر نے کہا کہ آپ نے ابھی تک درخواستوں پر تفصیلی جواب جمع نہیں کروایا ہے، 8 اکتوبر سے قبل تحریری جواب جمع کروائیں پھر دیکھیں گے کہ درخواست قابلِ سماعت ہے یا نہیں۔


الیکشن کمیشن آف پاکستان نے فیصل واوڈا کے خلاف نااہلی کی درخواستوں پر سماعت 8 اکتوبر تک ملتوی کر دی۔

الیکشن کمیشن میں دائر کی گئی درخواست میں مؤقف اختیار کیا گیا ہے کہ فیصل واوڈا نے کاغذاتِ نامزدگی جمع کراتے وقت دہری شہریت چھپائی۔

درخواست گزار کا مؤقف ہے کہ فیصل واوڈا نے قرض کی تفصیلات چھپائیں، ٹیکس نہیں دیا، انہوں نے بیرون اور اندرونِ ملک جائیدادیں خریدنے کے ذرائع اور منی ٹریل بھی نہیں دیا۔

قومی خبریں سے مزید