آپ آف لائن ہیں
اتوار22؍ رجب المرجب 1442ھ 7؍مارچ2021ء
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن
Jang Group

ہمیشہ باغی تھی اور کامیابی کے بعد بھی میری آواز اونچی رہی ہے، کنگنا

ممبئی (مانیٹرنگ ڈیسک )بولی وڈ اداکارہ کنگنا رناوت اپنے متنازع بیانات کے باعث شہ سرخیوں میں جگہ بناتی ہیں اور اکثر اوقات ان کے باعث وہ مشکلات میں بھی گھِر جاتی ہیں تاہم اب اداکارہ نے ٹویٹر پر نہایت حیران کن واقعہ سناتے ہوئے بتایا کہ ایک مرتبہ ان کے والد نے انہیں تھپڑ مارنے کی کوشش کی تو انہوں نے آگے سے جواب دیا کہ آپ مجھے ماریں گے تو جواب میں ، میں بھی آپ کو تھپڑ ماروں گی ۔تفصیلات کے مطابق ٹویٹر پر جاری پیغامات میں اداکارہ کنگنا رناوت کا کہناتھا کہ میرے والد کے پاس لائسنس یافتہ رائفل اور بندوق تھی ،جوانی کے دنوں میں وہ کالج میں گینگ وار کے لیے مشہور تھے اور ان کی شناخت ایک غنڈے کی تھی۔اداکارہ نے بتایا کہ میرے والد جب مجھے ڈانٹے تو میں کانپ کر رہ جاتی تھی، پھر میں نے صرف 15 سال کی عمر میں ان سے لڑائی کے بعد گھر چھوڑ دیا، اس طرح میں 15 سال کی عمر میں بغاوت کرنے والی پہلی راجپوت عورت بن گئی۔ کنگنا نے دوسرے ٹوئٹ میں لکھا کہ یہ انڈسٹری سمجھتی ہے کہ کامیابی نے میرا دماغ خراب کردیا ہے اور

وہ مجھے ٹھیک کردیں گے، میں ہمیشہ باغی تھی اور کامیابی کے بعد بھی میری آواز اونچی رہی ہے، میں قوم کی اہم آواز ہوں، تاریخ گواہ ہے کہ جس نے مجھے ٹھیک کرنے کی کوشش کی الٹا میں نے اسے ٹھیک کردیا۔کنگنا نے ایک اور ٹوئٹ میں اپنے والد کی جوانی تصویر شیئر کرتے ہوئے لکھا کہ میرے والد مجھے دنیا کی بہترین ڈاکٹر بنانا چاہتے تھے، انہیں لگتا تھا کہ وہ مجھے بہترین اداروں میں تعلیم دلوا کر ایک انقلابی باپ بن گئے ہیں، پھرجب میں نے اسکول جانے سے انکار کیا تو انہوں نے مجھے تھپڑ مارنے کی کوشش کی ، جس پر میں نے ان کا ہاتھ پکڑ لیا اور واضح طور پر کہہ دیا کہ اگر آپ نے مجھے تھپڑ مارا تو میں بھی آپ کو تھپڑ ماروں گی۔

دل لگی سے مزید