• بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن

خورشید شاہ کے بیٹے فرخ شاہ کو نیب دفتر منتقل کردیا گیا







پاکستان پیپلز پارٹی کے سینئر رہنما خورشید شاہ کے بیٹے فرخ شاہ کو قومی احتساب بیورو (نیب) کے دفتر منتقل کردیا گیا۔

 نیب کا کہنا ہے کہ فرخ شاہ کو جلد احتساب عدالت میں پیش کرکے ریمانڈ کی استدعا کی جائے گی۔

واضح رہے کہ  آمدن سے زائد اثاثوں کے کیس میں سیشن کورٹ نے خورشید شاہ کے بیٹے فرخ شاہ کی گرفتاری کا حکم دے تھا، جس کے بعد نیب ٹیم نے فرخ شاہ کو عدالت سے گرفتار کرلیا، نیب کی عدالت سے 15 روزہ ریمانڈ کی استدعا کی ہے۔

خورشید شاہ کے بیٹے فرخ شاہ نے سکھر کے تھرڈ ایڈیشنل اینڈ سیشن جج کی عدالت میں گرفتاری دے دی، فرخ شاہ نے سپریم کورٹ میں ضمانت قبل از وقت گرفتاری کے لئے درخواست دی تھی۔

سپریم کورٹ نے حکم دیا تھا کہ فرخ شاہ 3 روز میں احتساب عدالت سکھر میں گرفتاری دیں۔

ان کے وکیل نے موقف اختیار کیا کہ نیب نے سپریم کورٹ میں اعتراف کیا کہ تفتیش مکمل ہوچکی، تفتیش مکمل ہوچکی ہے تو گرفتاری کی کیا ضرورت ہے۔

نیب پراسیکیوٹر کا کہنا تھا کہ سپریم کورٹ نے حکم دیا تھا ملزم نیب کو سرینڈر کرے، ملزم نے نیب کی تفتیشی ٹیم کے بجائے عدالت میں سرینڈر کیا، ملزم شروع سے تفتیشی ٹیم سے تعاون نہیں کررہا۔

قومی خبریں سے مزید