• بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن

پاکستان کی افغانستان کیلئے قربانیوں کی مثال نہیں ملتی: فواد چوہدری

وفاقی وزیرِ اطلاعات و نشریات فواد چوہدری کا کہنا ہے کہ پاکستان نے جو قربانیاں افغانستان کے لیے دیں ان کی مثال کہیں نہیں ملتی۔

اسلام آباد میں وفاقی وزیرِ اطلاعات و نشریات فواد چوہدری نے پاک افغان یوتھ فورم کی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ افغان وفد کو اسلام آباد میں خوش آمدید کہتا ہوں، پاکستان اور افغانستان کا تعلق ایسا ہے کہ جدا نہیں ہو سکتے۔

انہوں نے کہا کہ تعلقات میں اونچ نیچ آتی ہے مگر مستقل تعلقات ہیں، دنیا میں ہمسایوں کے ساتھ ایسا چلتا ہے، پاک افغان کی تاریخ میں تعلقات میں تناؤ بھی ایک جبر تھا۔

فواد چوہدری کا کہنا ہے کہ 6 ہزار سے زائد افغان اسٹوڈنٹس پاکستان میں زیرِ تعلیم ہیں، افغانستان میں لڑائی امریکا نے ہم سے پوچھ کر نہیں کی مگر ہمیں نتائج بھگتنے پڑے۔

انہوں نے کہا کہ افغانستان کے حالات خراب ہوں تو پناہ گزینوں کا سیلاب آ جائے گا، امریکا اور سوویت یونین تو بیگ اٹھا کر چلے گئے، افغانستان اور پاکستان کو بھگتنا پڑا۔

وزیرِ اطلاعات و نشریات نے کہا کہ ہم لیڈرز کو چھوڑ کر لوگوں سے میڈیا کے ذریعے رابطہ رکھ سکتے ہیں، پاکستان اور افغانستان کا کلچر، زبانیں ایک ہیں۔

انہوں نے کہا کہ پاکستان میں 30 لاکھ سے زیادہ افغان پناہ گزین ہیں، ہم چاہتے ہیں کہ افغانستان میں امن اور استحکام ہو، چاہتے ہیں کہ وسطی ایشیاء کی مارکیٹس تک پہنچ ہو، وہ ہمارے کراچی گوادر کے پورٹس استعمال کریں۔

فواد چوہدری کا کہنا ہے کہ ہم نے کوشش کر کے طالبان اور افغان حکام کو امریکا کے ساتھ بٹھایا، ہمارا ایک حد تک رول ہو سکتا ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ آگے افغان دھڑوں کو ساتھ بیٹھنے کی ضرورت ہے، ہم افغان امن پراسس میں ایک حد تک مدد کر سکتے ہیں۔

وزیرِ اطلاعات فواد چوہدری نے یہ بھی کہا کہ افغانستان سے زیادہ بات سیکیورٹی پر ہو رہی ہے، ہمیں ادب اور کلچر پر بھی بات کرنی چاہیئے، ہم افغانستان کے ساتھ پشتو فلموں پر بھی اشتراک کریں گے۔

قومی خبریں سے مزید