Yasir Pirzada - Urdu Columns Pakistan | Jang Columns
| |
Home Page
پیر یکم ربیع الاوّل 1439ھ 20 نومبر 2017ء
یاسر پیر زادہ
ذرا ہٹ کے
November 19, 2017
اقوال زریں ٹھیک ہیں مگر

مجھے اقوال زریں بہت پسند ہیں، اکثر میں انہیں پڑھ کر دل ہی دل میں خوش ہوتا رہتا ہوں، وجہ اِس کی یہ ہے کہ آپ جس قسم کے بھی انسان ہیں آپ کو اسی قسم کا قول اپنے دل کی تسلی کے لئے مل جائے گا، حتّیٰ کہ اگر آپ میری طرح وقت ضائع کرنے کے چیمپئن ہیں تو اس کے لئے بھی آپ کو یہ قول مل جائے گا کہ Time you enjoy wasting is not wasted time۔ اسی طرح نالائقوں کی حوصلہ...
November 15, 2017
کلمہ حق کیا ہوتا ہے ؟

ہم سب ہی لاجواب ہیں، کلمہ حق کہنے کی بے مثال جرات ہم میں ہے، جابر سلطان کی ذرا برابر پرواہ نہیں کرتے، روزانہ رات کو حکمرانوں کے سر پر چپت رسید کرکے سوتے ہیں، کھرے کو کھرا اور کھوٹے کو کھوٹا کہتے ہیں، حق کا ساتھ دیتے ہیں، باطل کے آگے سینہ سپر ہو جاتے ہیں، سچ بات کا اعلان کرتے وقت بالکل بھی خوفزدہ نہیں ہوتے، ظالموں کو آنکھوں میں...
November 12, 2017
ٹیکنوکریٹس کا غم روزگار

ٹیکنوکریٹ سنجیدہ لوگ ہوتے ہیں، آپ انہیں دور سے ہی دیکھ کر پہچان سکتے ہیں، یہ ہر وقت سوٹ ٹائی میں رہنا پسند کرتے ہیں، سگریٹ نہیں پیتے کیونکہ یہ اب فیشن نہیں رہا، کبھی کبھار ڈرنک کر لیتے ہیں، انگریزی میں بات کرتے ہیں مگر جب کبھی اپنے پاکستانی ہونے کا ثبوت دینا ہو یا اپنے کلچر پر فخر کا اظہار کرنا مقصود ہو اُس وقت پنجابی میں بھی بات...
November 08, 2017
پنجاب کا چُورن بیچنے کا طریقہ

پیارے بچو !جیسا کہ آپ جانتے ہیں کہ پنجاب والے ہمیشہ دوسرے صوبوں کا حق غصب کرتے ہیں، چڑھتے سورج کی پوجا کرتے ہیں، وسائل پر قابض ہیں، نوکریاں میں بھی پنجابیوں کا حصہ زیادہ ہے، کلیدی عہدوں پر بھی پنجابی ہی تعینات ہیں، قومی اسمبلی میں بھی انہی کی اجارہ داری ہے، مقتدر اداروں میں بھی انہی کا سکہ چلتا ہے اور نہ جانے ان کے پاس کون سی چمک ہے...
November 05, 2017
ولی کامل کی تلاش

دونوں میرے عزیز دوست ہیں، دونوں سے محبت کا تعلق ہے، ایک قدرے مذہبی رجحان رکھتا ہے دوسرا نسبتاً آزاد خیال ہے، پہلے کو تصوف سے لگائو ہے تو دوسرے کو دنیا کے جھمیلوں سے فرصت نہیں، ایک پنج وقتہ نمازی ہے تو دوسرا صرف جمعہ پڑھتا ہے، پہلے کے دو خوبصورت بیٹے ہیں جبکہ دوسرے کی ایک ہی بیٹی ہے۔ اِس بیٹی کی عمر چودہ سال ہے مگر کسی پیدائشی مسئلے...
November 01, 2017
کہاں سے چلے تھے، کہاں آگئے

کھلے آسمان تلے سوتے تھے، تارے گن گن رات گزارتے تھے، سوچتے تھے ہر آنے والا کل آج سے بہتر ہوگا، ہر نئی صبح ایک سپنے کے ساتھ طلوع ہوتی، خواب تھا کہ اپنا دیس بھی ترقی کی منزلیں طے کرے، دعا تھی کہ یہاں وہ فصل گُل ہو جسے اندیشہ زوال نہ ہو، اپنے ملک کے شہر آباد رہیں، ہر سُو نئے چراغ جلیں، امیدیں کبھی دم نہ توڑیں، ہر بُری خبر کے ساتھ خود...
October 29, 2017
اپنے ضمیر سے ایک سوال

First they came for the Socialists, and I did not speak out—Because I was not a Socialist.Then they came for the Trade Unionists, and I did not speak out—Because I was not a Trade Unionist.Then they came for the Jews, and I did not speak out—Because I was not a Jew.Then they came for me—and there was no one left to speak for me. یہ شہرہ آفاق نظم مارٹن نائیمولر نامی پادری کی ہیں، ہٹلر کے دور عروج میں یہ شخص اُس کا بدترین ناقد تھا، یہ وہ دور تھا جب جرمنی ہٹلر کے عشق میں...
October 25, 2017
ہالینڈ کے وزیر اعظم کی سائیکل

خبر آپ نے پڑھ لی ہو گی، نہیں پڑھی تو میں بوریت کی قیمت پر دہرا دیتا ہوں۔ مارک رتّے (Mark Rutte) ہالینڈ کے وزیر اعظم ہیں، گزشتہ ہفتے انہوں نے ایک عجیب و غریب حرکت کی، اُنہیں ہالینڈ کے بادشاہ سے ملاقات کے لئے پہنچنا تھا تو شاہی محل تک جانے کے لئے انہوں نے جس سواری کا انتخاب کیا وہ ایک بائیسکل تھی، بغیر کسی پروٹوکول اور کرّو فر کے محض ایک...
October 22, 2017
ملالہ کی جینز اور مردوں کے جینز

’’ملالہ کو شرم آنی چاہئے، مغرب کی ایجنٹ تو تھی ہی، اب حلیہ بھی اُن جیسا ہی بنا لیا!‘‘یہ جملہ اُن لا تعداد تبصروں میں سے ایک ہے جو ملالہ یوسفزئی کی آکسفورڈ میں جینز میں ملبوس تصویر پر کئے گئے۔ مسئلہ ملالہ کی جینز کا نہیں، مسئلہ اُن کروڑوں ویلے اور مسٹنڈے مردوں کے جینز کا ہے جو قوم کی عظمت کا مینار عورت کے دوپٹے پر کھڑا کرنے کی...
October 18, 2017
ہم پاکستانی کیا چاہتے ہیں ؟

اگر سچ پوچھیں تو ہماری خواہشات خاصی جائز ہیں۔ ہم چاہتے ہیں کہ پورے ملک میں طورخم سے گوادر تک امن ہو، کسی مسجد کسی گرجے میں دھماکہ نہ ہو، ہر طرف قانون کی بالادستی ہو، چھوٹا، بڑا، عام اور خاص ہر شخص قانون کے دائرے میں رہے، سرکاری اداروں میں کسی کو اپنے کام کے لئے دھکے نہ کھانے پڑیں، یہاں لوگ اپنی شکایت درج کروائیں وہاں گھر بیٹھے...
October 15, 2017
کاہلی کا عالمی دن

کاہلی ایک عظیم نعمت ہے۔ کس کا دل کرتا ہے کہ علی الصباح بستر سے اسپرنگ لگا کر اٹھے، کسی پارک میں ایک گھنٹہ دوڑ لگائے اور اس کے بعد نہا دھو کر اپنے کام میں جُت جائے ۔ میرا بس چلے تو ایسی چوکس زندگی گزارنے والوں پر پابندی لگا دوں، اس قسم کے لوگوں کو اندازہ ہی نہیں کہ سُستی اور کاہلی میں کس قدر لطف ہے۔ بدنصیب ہیں وہ لوگ جو چھٹی کے دن بھی...
October 11, 2017
میں اعتراف کرتا ہوں

کوئی دس برس پرانی بات ہے، امریکہ کی ایک یونیورسٹی میں لیڈر شپ کے موضوع پر لیکچر سننے کا اتفاق ہوا، لیکچر دینے والے اُس امریکی پروفیسر کا نام تو اب مجھے یاد نہیں مگر اس کی شخصیت خاصی بھاری بھرکم تھی، قد چھ فٹ تھا مگر دیکھنے میں سات فٹ کا لگتا تھا، رنگ گورا، آنکھوں پر سنہری فریم کا چشمہ اور چہرے پر بچوں کی سی معصومیت۔ ڈیڑھ گھنٹے کا یہ...
October 08, 2017
ون وے ٹکٹ

عادل صاحب دوست ہیں اورکامیاب بزنس مین ہونے کے باوجود بے حد ذہین آدمی ہیں۔ باہم دوستی کی وجہ اُن کی تین ایسی باتیں جو مجھے بہت پسند ہیں۔ میوزک، ابن صفی اور خوش خوراکی۔ وقت گزرنے کے ساتھ ساتھ اُن کی دولت اور وزن دونوں میں یکساں رفتار سے اضافہ ہوا ہے، حیرت کی بات مگر یہ ہے کہ وزن کم کرنے کے جتنے نسخے عادل صاحب کو پتہ ہیں اتنے پورے ہند...
October 04, 2017
دس وائس چانسلرز کی تلاش

 گورنمنٹ کالج لاہور سے ایف ایس سی اور پھر بی اے کرنے کے بعد جب میرے چار سال اس کالج میں پورے ہو گئے تو میں نے سوچا اگر ایم اے کے اگلے دو سال بھی یہیں گزار دیئے تو زندگی بھر قلق رہے گا کہ کبھی یونیورسٹی کی شکل نہیں دیکھی۔ ویسے تو گورنمنٹ کالج میں پڑھنے والے پر واجب ہے کہ وہ جی سی کی شان میں ہمیشہ قصیدہ لکھے چاہے اس نے وہاں جھک ہی کیوں نہ...