• بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن

اس جدید دور میں جدت سے بھر پور چیزیں ایجا د کی جارہی ہیں۔ اس ضمن میں دنیا کا طاقتور ترین اور تیزرفتار پاوربینک تیار کیا گیا ہے۔ اس کا نام’’ایئربینک‘‘ رکھا گیا ہے جو مقناطیس کے بغیر کسی بھی فون کی پشت سے جڑسکتا ہے۔ اس کے اندر ایک طرح کا سکشن (چپکنے والا) نظام ہے جو اسے کسی بھی سطح سے چپکنے میں مدد دیتا ہے اور اسی بنا پر یہ 5500 ایم اے ایچ قوت سے فون کو برق رفتار چارجنگ فراہم کرتا ہے۔ یہ دنیا کا سب سے چھوٹا وائرلیس پاور بینک ہے۔ 

یہ خاص طور پر ڈیزائن کیا گیا ہےکہ دورانِ چارجنگ اس کے سہارے بھاری اسمارٹ فون بھی ٹک سکتا ہے۔ سب سے اہم بات یہ ہے کہ ایئربینک کے بدولت اب بھاری بھرکم اور بڑے پاوربینک کی ضرورت نہیں رہتی۔ بینک کی پشت پر نرم ربر کے گول سکشن پمپ لگائے گئے ہیں جن سے وہ فون پر چپک جاتا ہے۔ اس کے دو فائدے ہیں کہ ایک تو یہ کہ یہ مقناطیس ہر فون پر چپک نہیں سکتا اور دوسرا اس عمل میں چارجنگ بھی ضائع ہوجاتی ہے۔ 

جب کہ ایئربینک میں یہ عمل نہ ہونے کے برابر ہے۔ اس طرح یہ کسی بھی فون سے منسلک ہوکر اسے تیزی سے چارج کرسکتا ہے۔ دنیا کے سب سے چھوٹے پاوربینک سے بھی 30 فی صد چھوٹا ہے لیکن اس کی کارکردگی دوگنا ہے۔ اسے بنانے والی کمپنی اومار کو کا کہنا ہے کہ ایئربینک کو ہرطرح کی سخت آزمائش سے باربار گزارا گیا ہے۔ ایئربینک کی قیمت 78 امریکی ڈالرمقرر کی گئی ہے۔

سائنس اینڈ ٹیکنالوجی سے مزید
ٹیکنالوجی سے مزید