آپ آف لائن ہیں
ہفتہ2؍جمادی الثانی 1442ھ 16؍جنوری 2021ء
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیئرمین و ایگزیکٹوایڈیٹر: میر جاوید رحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن
Jang Group

اگلے 4 سے 6 مہینے وبا کے بدترین ثابت ہوسکتے ہیں:بل گیٹس

مائیکرو سافٹ کے بانی بل گیٹس نے عالمی وبا کورونا وائرس کے حوالے سے  خبردار کیا ہے کہ آئندہ 4 سے 6 ماہ دنیا کورونا وائرس کی وبا سے شدید متاثر ہونے والی ہے۔

بل گیٹس نے اپنے حالیہ انٹرویو میں کہا کہ اگلے 4 سے 6 ماہ وبا کے بدترین ثابت ہوسکتے ہیں۔


یہ پیشگوئی بل گیٹس کی جانب سے ایک ایسے وقت میں سامنے آئی ہے کہ جب کورونا کی روک تھام کے لیے ویکسین تیار کر لی گئی ہے اور دنیا کے بیشتر ممالک میں اس کا استعمال بھی شروع کیا جاچکا ہے۔

 انہوں نے کہا کہ انسٹیٹوٹ فار ہیلتھ میٹرکس اینڈ ایولوشن نے 2 لاکھ اضافی اموات کی پیشگوئی کی ہے۔

ساتھ ہی انہوں نے یہ بھی کہا کہ اگر ہم اصولوں پر عمل کریں یعنی فیس ماسک پہنیں اور سماجی دوری کے اقدامات پر عمل کریں تو متعدد اموات کی روک تھام کی جاسکتی ہے

لیکن دوسری جانب ایک اور انٹرویو میں انہوں نے کہا کہ ’موسم بہار میں امریکا میں کورونا کے کیسز کی تعداد میں ڈرامائی کمی آسکتی ہے اور ممکن ہے کہ حالات معمول پر آنا شروع ہوجائیں'۔

انہوں نے خبردار کیا کہ موسم سرما کے مہینے بدترین ثابت ہوسکتے ہیں اور اس کے بعد حالات میں تبدیلی آسکتی ہے اور 2021 کے اختتام تک ہی حالات ماضی کی طرح معمول پر آسکیں گے۔

ساتھ ہی انہوں نے خبردار کرتے ہوئے کہا کہ ’ مگر میرے خیال میں یہ وائرس دنیا میں موجود رہے گا اور ہمیں فیس ماسک کا استعمال کرنا ہوگا۔‘

اپنی بات جاری رکھتے ہوئے انہوں نے یہ بھی کہا کہ دنیا کے ہر کونے سے وائرس کے خاتمے کے بعد ہی وبا کا خاتمہ ممکن ہوسکے گا، تو حالات 2022 کی پہلی ششماہی سے قبل معمول پر نہیں آسکیں گے۔

خاص رپورٹ سے مزید