• بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن

دوسرا ٹی ٹوئنٹی: پاکستان نے ویسٹ انڈیز کو 7 رنز سے شکست دے دی


پاکستان نے ویسٹ انڈیز کو 7 رنز سے شکست دے کر سیریز میں 0-1 کی برتری حاصل کرلی۔ 

قومی ٹیم کی جانب سے دیے گئے 158 رنز کے ہدف کے تعاقب میں میزبان ٹیم 150 رنز بناسکی۔ 

اس سے قبل گیانا کے پرویڈینس میں کھیلے گئے اس میچ میں ویسٹ انڈیز نے ٹاس جیت کر پہلے بولنگ کرنے کا فیصلہ کیا تھا۔

ابتدا میں یہ فیصلہ ان کے لیے درست دکھائی نہیں دیا، پہلی وکٹ پر شرجیل اور رضوان کے درمیان 46 اور پھر اس کے بعد رضوان اور بابر کے درمیان 67 رنز کی پارٹنر شپ بنی۔

اس موقع پر ایسا دکھائی دے رہا تھا کہ قومی ٹیم، میزبان ٹیم کو بڑا ٹوٹل دینے میں کامیاب ہوجائے گی، تاہم ان فارم بلے بازوں کے آؤٹ ہونے کے بعد کوئی بھی کھلاڑی جم کر نہ کھیل سکا۔

قومی ٹیم 113 رنز پر 15ویں اوور میں دوسری وکٹ گنوانے کے بعد مقررہ 20 اوور تک 8 وکٹوں کے نقصان پر مجموعی طور پر صرف 157 رنز ہی بناسکی۔

پاکستان کی جانب سے بابر اعظم نے اور محمد رضوان نے 46 رنز کی اننگز کھیلی جبکہ شرجیل خان 20 اور فخر زمان 15 رنز بنا کر دیگر نمایاں رہے۔

ویسٹ انڈیز کی جانب سے جیسن ہولڈر 4 وکٹیں لینے میں کامیاب رہے جبکہ براوو کو 2 وکٹیں ملیں۔

ہدف کے تعاقب ہوم ٹیم مشکلات کا شکار رہی اور ابتدا میں اسے پاکستانی بولرز کا سامنا کرنے میں دشواری پیش آئی۔

ان فارم ویسٹ انڈین کھلاڑیوں نے وکٹ پر رکنے کے بعد بولرز کے خلاف رنز بٹورے اور اپنی ٹیم کو جیت کی جانب گامزن کرنے کی کوشش کی۔ 

تاہم قومی بولرز کی نپی تلی بولنگ کے آگے ویسٹ انڈیز کے کھلاڑیوں کی ہارڈ ہٹنگ کام نہ آئی، اور پاکستان ٹیم نے 7 رنز سے میچ جیت لیا۔

ویسٹ انڈیز کی جانب سے نکولس پورن 33 گیندوں پر 62 رنز بنا کر ناٹ آؤٹ رہے، جبکہ این لوئس نے 35 رنز کی اننگز کھیلی۔

قومی ٹیم کی جانب سے محمد حفیظ کو شاندار بولنگ پرفارمنس پر میچ کا بہترین کھلاڑی قرار دیا گیا۔

محمد حفیظ نے اپنے 4 اوورز کے کوٹہ میں ایک میڈن اوور کرواکر صرف 6 رنز دیے اور ایک وکٹ بھی لی۔ 

خیال رہے کہ دونوں ٹیمیں کے درمیان سیریز کا پہلا ٹی ٹوئنٹی میچ بارش کی نذر ہوگیا تھا۔ 

کھیلوں کی خبریں سے مزید