• بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن

السی تیل کے صحت پر حیران کُن فوائد

جس طرح ماہرین کی جانب سے السی کے بیج صحت کے لیے بے حد مفید قرار دیئے جاتے ہیں اسی طرح السی کے تیل کا  استعمال بھی صحت پر بے شمار فوائد کا حامل ہے۔

نیوٹریشنسٹ و غذائی ماہرین کے مطابق السی کے بیج خواتین کی صحت کے لیے نہایت مفید ہیں، السی کا تیل و بیج خواتین کے پوشیدہ امراض کے علاج کے ساتھ دل کی صحت، شفاف، بے داغ غیر ضروری بالوں سے پاک جِلد، ذہانت سمیت مجموعی صحت کے لیے انتہائی فائدہ مند ثابت ہوتے ہیں۔

غذائی ماہرین کے مطابق متعدد بیماریوں کی وجہ نظام ہاضمہ کی خراب کارکردگی اور قبض ہوتی ہے، السی کے بیج معدے سے جڑی تمام بیماریوں کے لیے بھی نہایت مفید ہے۔

ماہرین کا کہنا ہے کہ السی کے بیجوں کا ہمیشہ چبا کر یا سفوف بنا کر نیم گرم پانی یا دودھ کے ساتھ استعمال کرنا چاہیے، اگر یہ طریقہ کار ناگوار گزرے تو اس کے متبادل میں السی کے تیل کا استعمال نیم گرم دودھ کے ساتھ بھی کیا جا سکتا ہے ۔

نیم گرم دودھ میں السی کے تیل کے استعمال سے صحت پر آنے والے چند مثبت فوائد مندرجہ ذیل ہیں جن کی طب سمیت سائنسی رپورٹس میں بھی تصدیق موجود ہے۔

غذائی ماہرین کے مطابق السی کا تیل اینٹی آکسیڈنٹس اجزا سے بھرپور ہونے کے سبب جسم میں  موجود صحت مند یا سوزش زدہ خلیات میں مزید بگاڑ سے محفوظ رکھتا ہے اور کینسر کی روک تھام میں کردار ادا کرتا ہے۔

السی کا تیل اومیگا تھری فیٹی ایسڈ، اومیگا سِکس سے بھرپور ہوتا ہے جو کہ انسانی جسم میں موجود منفی کولیسٹرول کی سطح گھٹاتا ہے اور مثبت کولیسٹرول کی سطح متوازن بنا کر جسم میں چربی کے جمنے کا عمل روکتا ہے اور جسم کو فربہ ہونے سے بچاتا ہے۔

السی کے تیل کا استعمال دل سے جڑی اہم شریانوں کو صحت مند رکھنے میں بھی مدد دیتا ہے فراہم کرتا ہے۔

السی کا تیل فیٹی ایسڈز سے بھرپور ہونے کے سبب دل سے جڑے مسائل جیسے کہ ہارٹ اٹیک اور فالج وغیرہ کی روک تھام میں بھی کرادار کرتا ہے اور جسم میں خون کے جمنے ( کلاٹنگ) کے خطرات کو کم کرتا ہے۔

السی کا تیل و بیج ڈائٹری فائبر سے بھر پور ہوتے ہیں جس کے نتیجے میں اس کے استعمال سے  معدے کی صحت بہتر اور کارکردگی میں اضافہ ہوتا ہے۔

السی کے تیل میں اومیگا تھری فیٹی ایسڈ ہونے کے سب اس کا استعمال اسکول جانے والے بچوں کو کروایا جا سکتا ہے، السی کا تیل دماغی صحت بہتر بنانے کے ساتھ ذہانت بڑھاتا ہے۔

گھر سے باہر نکلنے والی خواتین کی جِلد سے نمی کا خاتمہ اور چہرہ بے رونق ہو جاتا ہے، ایسے میں السی کا استعمال چہرے کی شادابی اور تازگی کو لوٹانے میں اہم کردار ادا کرتا ہے۔

السی کا تیل براہ راست بطور اسکن سیرم کے بھی استعمال کیا جا سکتا ہے۔

السی کے تیل میں اومیگا تھری فیٹی ایسڈز کی موجودگی بالوں کو مضبوط بناتی ہے اور جھڑتے بالوں کو روکتی ہے، نئے بالوں کی افزائش ممکن بناتی ہے۔

صحت سے مزید