Jawwad Nazeer - Urdu Columns Pakistan | Jang Columns
| |
Home Page
بدھ 30 ذیقعدہ 1438ھ 23 اگست 2017ء
جواد نذیر
August 18, 2015
جب نقدی ساری ختم ہوئی

آج سلسلہ کلام دو واقعات سے شروع کرتے ہیں:8 جولائی میری بیٹی امل کی سالگرہ کا دن ہے۔ مجھے اس کو تحفہ دینے کے لئے ایک ’’گرافک ٹیبلٹ‘‘ (GRAPHIC TABLET) کی تلاش تھی۔ اسی سلسلے میں گلبرگ لاہور میں واقع سب سے بڑی کمپیوٹر مارکیٹ میں جانے کا اتفاق ہوا۔ TABLET تو مل گیا مگر دکاندار نے جو قیمت بتائی وہ خاصی زیادہ تھی۔ اتنے پیسے جیب میں نہیں تھے۔ میں...
August 08, 2015
وہ دیکھو ....کو ّا

صاحبو!سپریم کورٹ سے آئینی ترمیم اور فوجی عدالتوں کے حق میں فیصلہ آنے پر ہمارے عظیم سیاستدان خوشی کے شادیانے بجارہے ہیں۔ ایک دوسرے کو مبارکبادیں دے رہے ہیں۔ وہ ان فیصلوںکوپارلیمینٹ کی بالادستی اور انصاف کی فتح قرار دے رہے ہیں مگر ہمیں تو یہ سب کچھ سرداروں کی بس کا منظرلگتاہے! کیسے ؟آیئے دیکھتے ہیں۔خالصہ ٹرانسپورٹ کی بس، لاری...
July 06, 2013
”گڈ گورننس“

مسلم لیگ ن کے سربراہ میاں محمد نواز شریف نے دو نعرے لگا کر 2013ء کا عام الیکشن جیتا، ان کا پہلا نعرہ تھااے طائر لاہوتی، اس رزق سے موت اچھیجس رزق سے آتی ہو، پرواز میں کوتاہیدوسرے لفظوں میں ان کا کہنا تھا کہ ہم بھیک نہیں مانگیں گے، کشکول توڑ دیں گے، مگر الیکشن کے بعد کے حالات نے ثابت کیا ہے کہ سیاست دان ”طائر لاہوتی“ نہیں، بندہ خاکی...
July 03, 2013
پانچواں درویش’میرے چارہ گر کو نوید ہو، صفِ دشمناں کو خبر کرو“

قرض خانے کا دروازے کھل چکا، حکومتی دریوزہ گر اپنا اپنا کشکول اٹھائے ڈالر، پونڈ، یورو، درہم و ریال… ہر قسم کی خیرات لینے کے لئے تیار کھڑے ہیں!اس ملک کے بے خبر اورمقروض عوام کو علم ہونا چاہئے کہ ماضی میں حکومتوں نے اپنے اللوں، تللوں کے لئے عوام کے نام پر جو قرضے حاصل کئے تھے، ان کی قسطیں ادا کرنے کا وقت آچکا۔ پاکستان کو 3ارب 20کروڑ...
July 01, 2013
یہاں کچھ نہیں بدلے گا

’شعلے‘ بھارتی سینما کی پہلی ”بلاک بسٹر“ فلم تھی۔ اس فلم کی کہانی مشہور بھارتی نغمہ نگار جاوید اختر اور اداکار سلمان خاں کے والد سلیم خاں نے مل کر لکھی تھی۔ یہ جوڑی اس وقت ”سلیم جاوید“ کہلاتی تھی۔ اگرچہ کہا یہ جاتا ہے کہ دونوں نے ’شعلے‘ کی کہانی کئی انگریزی فلموں کو Cut, Paste کر کے لکھی، تاہم دونوں کی محنت سے ایک سپرہٹ فلم معرض وجود...
June 29, 2013
ڈٹھا عشق عیاں، تا بازار گلی

پاکستانی معاشرہ اس وقت دو طرف سے یلغار کا شکار ہے!ایک طرف حکمران طبقہ اشرافیہ ہے، اسلام آباد، لاہور اور کراچی میں مقیم اس طبقہ اشرافیہ میں پشتینی زمیندار، پیر، جاگیردار اور سردار شامل ہیں اور تاجر پیشہ سیاست دان بھی، سول بیورو کریسی اس کا حصہ ہے تو فوجی بیورو کریسی بھی، عدالتیں، مذہبی پیشوا اور میڈیا… سب اسی حکمران طبقہ اشرافیہ...
June 28, 2013
ماضی کے مردے، مستقبل کے بھوت

دنیا بھر کے مہذب معاشروں میں یہ چلن ہے کہ انتخابات کے بعد جو بھی نئی حکومت قائم ہوتی ہے اسے 90 روز کاHONEY MOON PERIOD دیا جاتا ہے ۔مخالف سیاسی قوتیں اور میڈیا نئی حکومت پر جارحانہ تنقید سے گریز کرتا ہے جبکہ نئی حکومت بھی پھونک پھونک کر قدم اٹھاتی ہے تاکہ وہ معاملات کو سمجھ سکے اور مسائل سے نمٹنے کے لئے اپنی حکمت عملی ترتیب دے سکے۔مسلم لیگ...
June 26, 2013
تو کہ ناواقف آداب غلامی ہے ابھی

سوال یہ پیدا ہوتا ہے کہ 12 اکتوبر 1999ء اور 3 نومبر 2007ء کو جب جنرل مشرف نے دو مرتبہ اس ملک کا آئین توڑا تو کیا وہ اکیلے ہی یہ مہم جوئی کرنے میں کامیاب ہوئے یا ان کے کچھ اور ساتھی بھی تھے؟اکتوبر 1999ء میں باقاعدہ فوجی مارشل لاء لگایاگیا۔ جس میں جنرل مشرف کے ساتھیوں میں اس وقت کے راولپنڈی کے کور کمانڈر جنرل محمود، کراچی کے کور کمانڈر جنرل...
May 25, 2013
لوڈشیڈنگ شودروں کے گھر

گزشتہ رات قیامت کی گرمی تھی۔ رات بارہ بجے کے قریب ایک لطیفہ یاد آیا۔ایک مبلغ، افریقہ کے دوردرازعلاقے میں تبلیغ کر رہا تھا کہ اسے ایک وحشی قبیلے نے پکڑ لیا۔ سردار نے اعلان کیا کہ اس مبلغ کو آگ پر بھون کر کھایا جائے گا۔ مبلغ کا خدا پر پختہ یقین تھا۔ اس نے آسمان کی طرف منہ اٹھایا اور کہا:”اے میرے خدا … مجھے بچا لے، میں تیری تبلیغ کرتے...
May 23, 2013
اِک تمغہ حسن کارکردگی درکار ہے

بھارتی فلم ”بھائی بھائی“ 1956ء میں ریلیز ہوئی تھی!اس میں لتا منگیشکر نے ایک خوبصورت گانا گایا تھا، اس کالم میں آپ کو گانا تو نہیں سنوایا جاسکتا، تاہم اس گانے کے بول پڑھیں اور مزہ لیں۔اس دنیا میں سب چور چور، اس دنیا میں سب چور چورکوئی پیسہ چور، کوئی مرغی چور، کوئی دل کا چوراس دنیا میں سب چور چور…کوئی چوری کرے خزانے کیکوئی آنے دو آنے...
May 22, 2013
دل وہ بے مہر کہ رونے کے بہانے مانگے

پنجابی زبان میں ایک محاورہ ہے ”من حرامی تے حُجتاں ہزار“ مگر ذرا رکئے، آپ ”حرامی“ کے لفظ پر خواہ مخواہ کسی مغالطے کا شکار نہ ہوجائیں۔ وضاحت ضروری ہے!پنجابی ایک RUSTIC زبان ہے، جو کبھی بھی سرکار دربار کاحصہ نہیں رہی، اس لئے اس میں اردو اورفارسی جیسا لوچ اور نفاست آپ کوکم کم ہی نظر آئے گی۔ اس کا بیانیہ یا اظہار کھلاڈلا ہوتا ہے۔ پنجابی...
May 20, 2013
کیا ہونے والا ہے؟

زمانہ قدیم کی اساطیری داستانوں میں بادشاہوں اور بزرگوں کے پاس ایسے آلات ہوتے تھے جن میں انہیں مستقبل کی تصویر نظر آ جاتی تھی، مثلاً ایران کے بادشاہ جمشید کے پاس ایک ایسا پیالہ تھا جس میں اسے آنے والے وقت کی جھلکی دکھائی دیتی تھی، اسی پیالے کے بارے میں مرزا غالب نے غالباً جل کر یہ کہا تھا :جام جنم سے مرا جام منال اچھا ہے! داستانوں میں...
May 18, 2013
انگوٹھے لے لو

الیکشن کمیشن آف پاکستان ”باؤلا“ ہو گیا ہے! اس کا حال اس شوہر کا سا ہے جس نے صبح اخبار پڑھنے کے بعد اپنی بیوی سے مخاطب ہو کر گرج دار لہجے میں کہا۔”اگر حکومت میرے ہاتھ میں آ جائے تو میں اس ملک کی تقدیر بدل دوں!“جس پر بیوی نے طنزیہ لہجے میں کہا۔”پہلے اپنی شلوار تو بدل لو، صبح سے میری شلوار پہنے گھوم رہے ہو!“اچھے بھلے الیکشن ہو گئے،...
May 17, 2013
عوام کنفیوز کیوں ہیں؟

ہنگامہ ہے کیوں برپا، تھوڑی سی جو پی لی ہےڈاکہ تو نہیں ڈالا، چوری تو نہیں کی ہے!2013 کے عام انتخابات بخیر و خوبی انجام پائے، کہاں کی دھاندلی، کیسا احتجاج؟ سب کچھ توطے شدہ منصوبے کے تحت ہوا۔ سب لوگوں کو ”حصہ بقدر جثہ“ ملا… ہاں کہیں کہیں مصالحہ تھوڑا زیادہ لگ گیا۔ جس کی جلن کے باعث چند شرپسند قسم کے لوگ بے چین اور بے قرار ہیں، احتجاج کر...