تاجروں اور دکانداروں کو بلا تعطل بجلی کی فراہمی کو یقینی بنایا جائے،سرحد چیمبر

January 20, 2022

پشاور( لیڈی رپورٹر ) سرحد چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری کے نائب صدر جاوید اختر نے پشاور شہر کے مختلف بازاروں مسلم مینا بازار ٗ شاہین بازار ٗ گھنٹہ گھر ٗ شاہین بازار ٗ جھنڈا بازار ٗ ریتی بازار ٗ کوچی بازار ٗسبزی منڈی ٗ کریم پورہ ٗ یکہ توت ٗ گلشن بازار سمیت جی ٹی روڈ سے ملحقہ دیگربازاروں میں بجلی کی غیر اعلانیہ ناروا لوڈشیڈنگ کی شدید مذمت کی ہے اور پیسکو حکام سے مطالبہ کیا ہے کہ کاروباری مراکزمیں تاجروں اور دکانداروں کو اپنے کاروبار چلانے کے لئے بلا تعطل بجلی کی فراہمی کو یقینی بنایا جائے بصورت دیگر پشاور کے تاجر اور دکاندار احتجاج کرنے پر مجبور ہوں گے جس کی تمام تر ذمہ داری پیسکو پر عائد ہوگی۔ان تحفظات کا اظہار انہوں نے گذشتہ روز پشاور کے مختلف بازاروں کے صدور ٗ جنرل سیکرٹریز اور عہدیداروں کے وفود سے ملاقات کے موقع پر کیا۔ سرحد چیمبر کے نائب صدر جاوید اختر نے شہر بھر کے بازاروں سمیت تجارتی مراکز کو بجلی کی عدم فراہمی کو سراسر زیادتی قرار دیا اور کہا کہ پیسکوکی جانب سے پرمٹ اور لوڈ مینجمنٹ / ضروری مرمت کے نام پر گھنٹوں گھنٹوں بجلی بندکردی جاتی ہے جس سے کاروباری سرگرمیاں شدید متاثر ہو رہی ہیں جس سے تاجر برادری شدید مشکلات کا شکار ہے۔ انہوں نے کہا کہ کاروباری اوقات کار میں آئے روز بجلی کی بندش کی وجہ سے ڈیلی ویجز پر کام کرنیوالے کاریگر ٗ مزدور طبقہ جس میں ٹیلرز ٗ ایمبرائیڈری ورکرز ٗ سلمہ ستارہ کے کاریگر فاقہ کشی پر مجبور ہوگئے ہیں۔ انہوں نے کہاکہ بجلی کی غیر اعلانیہ لوڈشیڈنگ اور بجلی کی عدم فراہمی کی وجہ سے تاجر اور دکاندار طبقہ اپنا کاروباربندکرنے پر مجبور ہوگئے ہیں۔سرحد چیمبر کے نائب صدر جاوید اختر نے کہا کہ کاروباری مراکز سے سو فیصد ریکوری کے باوجود پیسکو کی جانب سے بجلی کی بندش سمجھ سے بالاتر ہے اور سراسر زیادتی اور ناانصافی ہے۔انہوں نے مزید کہا کہ صوبے کی معیشت پہلے ہی کورونا وباء لاک ڈاؤن ٗ دہشت گردی ٗ بھتہ خوری اور اغواء برائے تاوان کی وارداتوں سمیت امن و امان کی ابتر صورتحال کی وجہ سے زبوں حالی کا شکار ہے اور اس پر بجلی جو اس صوبے کی اپنی پیداوار ہے کی عدم فراہمی ظلم و زیادتی اور کاروبار دشمنی کے مترادف ہے۔ انہوں نے مرکزی و صوبائی حکومتوں سے مطالبہ کیا کہ وہ پیسکو کی جانب سے ناروا اور غیر اعلانیہ لوڈشیڈنگ کا فوری نوٹس لیں اور شہر بھر کے بازاروں اورتجارتی مراکز کو بجلی کی بلا تعطل فراہمی کو یقینی بنایا جائے۔ انہوں نے واپڈا ٗ پیسکو سے بھی مطالبہ کیا کہ جن بازاروں میں بجلی کی کھپت زیادہ ہے وہاں ٹرانسفارمر کو الگ کردیا جائے تاکہ آئے روز اوور لوڈنگ کی وجہ سے بجلی کی ٹرپنگ اور ٹرانسفارمرز کی خرابی کا مسئلہ حل ہوسکے ٗ واپڈا کے ٹیکینل سٹاف کی کمی کو بھی پورا کیا جائے تاکہ بروقت عوام کو سروسز مہیا ہوسکیں۔