Advertisement

حُسین ؓ بس دعا میں تھے

September 08, 2019
 

ڈاکٹر عزیزہ انجم

حُسین ؓ کربلا میں تھے

حُسین ؓابتلا میں تھے

وہ جبر کی لکیر تھی

یہ وادئ وفا میں تھے

وہ رزم گاہ ِشوق تھی

یہ خیمئہ قضا میں تھے

وہ پھول آگ بن گئے

جو دامنِ صبا میں تھے

نمازِ عشق ادا ہوئی

سب اُن کی اقتدا میں تھے

نبی ؐ کو اُن سے پیار تھا

وہ قلبِ مصطفیٰﷺ میں تھے

عجیب زرد شام تھی

حُسین ؓبس دعا میں تھے

حُسین ؓکربلا میں تھے

حُسینؓ ابتلا میں تھے


مکمل خبر پڑھیں